سول ادارے نیشنل ایکشن پلان پر عملدرآمد نہ کرا سکے،صاحبزادہ حامد رضا

سول ادارے نیشنل ایکشن پلان پر عملدرآمد نہ کرا سکے،صاحبزادہ حامد رضا

  

لاہور (نمائندہ خصوصی) سنی اتحاد کونسل پاکستان کے چیئرمین صاحبزادہ حامد رضا نے کہا ہے کہ سول ادارے نیشنل ایکشن پلان پر عملدرآمد میں ناکام ہو گئے ہیں۔ حکومت آرمی چیف کے پیغام کو سمجھے اور گورننس کو بہتر بنائے۔حکومتی نااہلی کی وجہ سے فوج کی قربانیاں ضائع ہو رہی ہیں۔ نجکاری کے فیصلے کے خلاف تحریک چلائیں گے اور واپڈا ملازمین کا ساتھ دیں گے۔نیشنل ایکشن پلان کے صرف ان حصوں پر عمل ہوا ہے جس کا تعلق عسکری اداروں سے ہے۔کرپشن کیسوں پر پیش رفت نہ ہونا المیہ ہے۔مودی کی پالیسیوں سے بھارت ٹکڑے ٹکڑے ہو جائے گا۔ سپیکر کے انتخاب نے پی پی پی اور ن لیگ کی نورا کشتی ثابت کر دی ہے ۔

اور واضح ہو گیا ہے کہ حکومت کے خلاف تحریک انصاف ہی حقیقی اپوزیشن ہے۔اپوزیشن متحد نہ ہوئی تو حکومتی من مانیاں جاری رہیں گی ۔ اپوزیشن کا گرینڈ الائنس وقت کی اہم ضرورت ہے۔قوم کو عالمی مالیاتی اداروں کا غلام بنانے والے حکمران قومی مجرم ہیں۔ حکومتی نااہلی کی وجہ سے نیکٹا فعال نہیں ہوسکا۔ حکومت نے زلزلہ متاثرین کو لاوارث چھوڑ دیا ہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے جامعہ رضویہ میں مرکزی و صوبائی عہدیداران کے ہنگامی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ صاحبزادہ حامد رضا نے مزید کہا کہ حکومت بلدیاتی اداروں کی مالی خود مختاری یقینی بنائے۔بھارت کی مضموم کاروائیوں کو سفارتی سطح پر بے نقاب کیا جائے۔پاکستان کی نظریاتی اسا س کے خلاف سازشیں تیز ہو چکی ہیں۔ الیکشن کمیشن کی کارکردگی مایوس کن ہے۔اقتصادی راہداری منصوبے کے خلاف سازشیں ناکام بنانے کیلئے قومی اتحاد و یکجہتی ضروری ہے۔حکومت نے عوام کو مہنگائی اور بیروزگاری کے سوا کچھ نہیں دیا ۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -