مودی تنگ نظر شخصیت اور’’کلاسک کلینیکل کیس‘‘ہے،برطانوی میڈیا

مودی تنگ نظر شخصیت اور’’کلاسک کلینیکل کیس‘‘ہے،برطانوی میڈیا

  

لندن(خصوصی رپورٹ)برطانوی میڈیا نے بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی کے دورہ برطانیہ پر خدشات کا اظہار کیا ہے،برطانوی میڈیا کے مطابق بہار کی شکست سے مودی کا دورہ برطانیہ دھندلا ہو سکتا ہے۔برطانوی میڈیاکے مطابق بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی ایسے وقت برطانیہ کا دورہ کر رہے ہیں جب وہ اپنے ملک میں مشکلات کا شکار ہیں۔ دی فنانشل ٹائمز لکھتا ہے کہ اس ہفتے وزیر اعظم مودی کی برطانوی وزیر اعظم اور ملکہ سے ملاقات طے ہے،انہیں ویمبلے سٹیڈیم میں ساٹھ ہزار افراد سے خطاب بھی کرنا ہے،لیکن اندرونِ ملک بڑھتی مشکلات ان کے دورے کو متاثر کرسکتی ہیں۔اخبار دی انڈیپنڈینٹ لکھتا ہے کہ وزیر اعظم نریندر مودی کے دورہ برطانیہ سے قبل بہار الیکشن کے نتائج ان کے لئے "شرمناک دھچکا" ہیں ، بہار الیکشن کے نتائج سے یہ ظاہر ہوتا ہے کہ مودی انتظامیہ کو اپنے ہی ملک میں عدم برداشت پر اکسانے کے الزامات کا سامنا ہے۔ڈیلی ٹیلی گراف نے بھی نریندر مودی کی بہار میں بہ آسانی شکست اور ان کے داخلی کمزور موقف پرخدشات کا اظہار کیا،ادھرلندن میں بھارتی وزیراعظم کے دورے سے قبل ہی ان کے خلاف احتجاج کا سلسلہ شروع ہو گیاہے، برطانوی پارلیمنٹ کی عمارت پر مودی کے خلاف نعرہ لکھ دیا گیا ہے کہ ’’ہم مودی کا خیرمقدم نہیں کرتے‘‘۔دوسری جانب اخبار گارجین میں شائع ہونیوالے ایک مضمون میں مضمون نگار نے دوہزار بارہ میں ایک سماجی ماہرنفسیات کی مودی سے ملاقات کاذکر کیا ہے،اس ماہر نفسیات نے مودی کو آمرانہ شخصیت کا حامل ،تنگ نظر اورکٹر نظریات کا مجموعہ ،تشدد کی فضا میں رہنے والا، ایک "کلاسک کلینیکل کیس"قرار دیا تھا۔

برطانوی میڈیا

مزید :

صفحہ اول -