داتا گنج بخش ٹاؤن کی مصدقہ نقول برانچ میں بے ضابطگیوں کا خاتمہ نہ ہو سکا

داتا گنج بخش ٹاؤن کی مصدقہ نقول برانچ میں بے ضابطگیوں کا خاتمہ نہ ہو سکا

  

لاہور(عامر بٹ سے) محکمہ ریونیو کی داتا گنج بخش ٹاؤن مصدقہ نقول برانچ میں جعلی رجسٹریاں ریکارڈ میں پیسٹ کرنے کے دھندے کا خاتمہ نہ ہو سکا، سینکڑوں رجسٹریاں ،داتا گنج بخش ٹاؤن کی مصدقہ نقول برانچ کے ریکارڈ میں شامل کی جاچکی ہیں جس کی وجہ سے ناصرف ہزاروں کنال اراضی سے صوبائی حکومت محروم ہو چکی ہے بلکہ اوور سیز پاکستانیوں اور ضلع لاہور میں مقیم سینکڑوں متاثرہ شہریو ں کی کثیر تعداد بھی موجودہے روزنامہ پاکستان کی جانب سے کئے جانے والے سروے کے دوران معلوم ہوا ہے کہ سب رجسٹرار داتا گنج بخش ٹاؤن نے بھی بااثر ریکارڈ کیپر کاشف بٹ کو مزید ریکارڈ روم میں رکھنے سے بھی معذرت کر لی ہے ۔ ذرائع نے بتایا کہ ریکارڈ کیپر کاشف بٹ اور اس کے دیگر ساتھیوں کے خلاف اینٹی کرپشن لاہور ریجن میں چند روز قبل بھی مسمات ثمینہ نذیر کی مدعیت میں مقدمہ درج کیا گیا ۔دوسری جانب ریکارڈ کیپر داتا گنج بخش ٹاؤن نقول برانچ کاشف بٹ نے اپنے موقف میں کہا ہے کہ اینٹی کرپشن میں دائر مذکورہ مقدمہ کے خلاف میں اپنا جواب داخل کروا چکا ہوں ،جس کے بارے میں اے ڈی سی جی،اے ڈی سی آر اور میرے سب رجسٹرار کو بھی پتہ ہے،یہ مقدمہ بے بنیاد ہے ۔

مزید :

میٹروپولیٹن 4 -