کوہاٹ ،معدنیات کی غیر قانونی کان کنی کیخلاف دو طرفہ تعاون پر اتفاق

کوہاٹ ،معدنیات کی غیر قانونی کان کنی کیخلاف دو طرفہ تعاون پر اتفاق

  

کوھاٹ (بیورو رپورٹ) کوہاٹ میں قیمتی معدنیات کی غیر قانونی کان کنی کے خلاف قانونی کاروائی عمل میں لانے کیلئے دوطرفہ تعاون کے حوالے سے اتفاق کر لیا گیا ہے ۔اس سلسلے میں ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر کوہاٹ محمد صہیب اشرف کی زیر صدارت انکے دفتر میں محکمہ مائننگ حکام اور پولیس افسران کی مشترکہ اجلاس کا انعقاد ہوا جسمیں ڈی ایس پی لیگل کوہاٹ جاوید چغتائی، رائلٹی انسپکٹر اورنگزیب، ایس ایچ او تھانہ چھاؤنی انسپکٹرعمر حیات،ایس ایچ او تھانہ محمد ریاض شہید انسپکٹر سادات خان،ایس ایچ او تھانہ بلی ٹنگ سب انسپکٹر خان للہ،ایس ایچ او تھانہ جرما سب انسپکٹر محمد افضل اعوان اور ایس ایچ تھانہ استرزئی سب انسپکٹر بشیر خان نے شرکت کی۔اجلاس میں کوئلہ،پتھر،جپسم اور دیگر قیمتی معدنیات کی تلاش کیلئے غیر قانونی کان کنی کو روکنے کیلئے پولیس اور مائننگ ڈیپارٹمنٹ کے مابین دو طرفہ تعاون بڑھانے پر زور دیا گیا۔اجلاس کو بتایا گیا کہ معدنیات کی غیر قانونی کان کنی سے ملکی معیشت کو بے پناہ نقصان پہنچ رہا ہے جسکے سد باب کیلئے مؤثر اقدامات قومی مفاد ات کے متقاضی ہیں۔اجلاس میں معدنیات کی غیر قانونی کان کنی سے پیدا ہونے والی مس منیجمنٹ کی صورتحال پر قابو پانے اور آئندہ ایسے کسی بھی مجرمانہ اقدام کی روک تھام کے حوالے سے ماہانہ جائزہ اجلاس کے انعقاد کا فیصلہ کیا گیا۔اس موقع پر ڈی پی او کوہاٹ نے اجلاس کو بتایا کہ قیمتی معدنیات کی غیر قانونی کان کنی کے خلاف ضلعی پولیس کا کریک ڈاؤن جاری ہے اور اس سلسلے میں اب تک 27ملوث افراد کے خلاف مقدمات درج کرکے انہیں مقامی عدالتوں سے سزائیں دلانے کیلئے تفتیش کا عمل جاری ہے۔انہوں نے محکمہ مائننگ کے نمائندے کو ہدایت کی کہ وہ کسی بھی تھانے کی علاقائی حدود میں غیر قانونی کان کنی کی نشاندہی کرکے متعلقہ تھانے کی پولیس سے رجوع کریں تاکہ انکی شکایت پر بھر پور قانونی کاروائی عمل میں لائی جاسکے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -