تاجک صدر کے دورہ پاکستان سے باہمی تعاون کو فروغ ملے گا، وزیر اعظم نواز شریف

تاجک صدر کے دورہ پاکستان سے باہمی تعاون کو فروغ ملے گا، وزیر اعظم نواز شریف
تاجک صدر کے دورہ پاکستان سے باہمی تعاون کو فروغ ملے گا، وزیر اعظم نواز شریف

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)وزیراعظم نوازشریف اور تاجک صدر نے مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ دونوں ممالک کے درمیان معاہدوں سے باہمی تعاون کو فروغ ملے گا، تجارت بڑھے گی اور تعلقات مزید مضبوط ہونگے۔

وزیر اعظم نواز شریف نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ تاجکستان کے صدر کو دورہ پاکستان پر خوش آمدید کہتے ہیں، وسط ایشیائی ریاستوں کے دورے باہمی تعاون کے فروغ کے عزم کا اظہار ہیں، میرے اور تاجک صدر کے دورں سے باہمی تعلقات اور تعاون میں اضافہ ہوگا،علی امام رحمان کا دورہ تعلقات کو مزید مستحکم بنائے گا، تاجکستان کے صدر کے ساتھ بات چیت انتہائی مفید رہی ، وفود کے تبادلے دونوں ممالک کے مضبوط تعلقات کا مظہر ہیں ۔

وسط ایشیائی ریاستوں کے ساتھ تجارت بڑھانا چاہتے ہیں ، تاجکستان وسط ایشیائی ریاستوں میں پاکستان کے سب سے زیادہ قریب ہے اور وسط ایشیائی ریاستوں کے لیے تاجکستان گیٹ وے کی حیثیت رکھتا ہے۔ آج ہونے والے معاہدے دونوں ملکوں کے درمیان ترقی کا سنگ میل ثابت ہوں گے تاجکستان کے ساتھ زمینی اور فضائی رابطے مزید مضبوط ہوں گے ۔

پاکستان نے گزشتہ مہینے دوشنبے میں صنعتی نمائش کا اہتمام کیا امید ہے کاسا ایک ہزار 2017 میں مکمل ہوجائے گا، دہشتگردی اور انتہا پسندی ہمارے مشترکہ دشمن ہیں ،پاکستان دہشتگردی کے خاتمے کیلئے پ±رعزم ہے ۔

تاجکستان کے صدر امام علی رحمن نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ میرا دورہ پاکستان انتہائی مثبت اور کامیاب رہادورہ پاکستان باہمی تعلقات کی کامیابی کی داستان ہے ۔ پاکستان اور تاجکستان کے مذاکرات میں دو طرفہ شراکت داری سے متعلق بات ہوئی فضائی اور زمینی رابطے بڑھانے پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔ انہوں نے بتایا کہ مشترکہ وزارتی کمیشن کا اجلاس اسلام آباد میں بلانے کی تجویز دی ہے علاقائی تعاون کے نوازشریف کے وژن کی تائید کرتے ہیں،انسداد دہشتگردی و منشیات کے لیے تعاون کریں گے ۔

مزید :

قومی -اہم خبریں -