لبرل پاکستان کی باتیں آئین سے بے وفائی اور غداری ہیں: سراج الحق

لبرل پاکستان کی باتیں آئین سے بے وفائی اور غداری ہیں: سراج الحق
لبرل پاکستان کی باتیں آئین سے بے وفائی اور غداری ہیں: سراج الحق

  

اکوڑہ خٹک (مانیٹرنگ ڈیسک)امیر جماعت اسلامی سینیٹر سراج الحق نے خبردار کیا ہے کہ لبرل پاکستان کی باتیں آئین پاکستان سے بے وفائی اور غداری کے زمرے میں آتی ہیں۔آئین پاکستان میں لبرل پاکستان کی کوئی گنجائش نہیں ،ہم ملک کو لبرل نہیں بلکہ آئین کی روح کے مطابق ایک اسلامی و فلاحی مملکت بنا کر دم لیں گے ،قبائلی عوام نے ملک کیلئے بے پناہ قربانیاں دیں ہیں ہم انکی قربانیوں کو قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں ،قبائل کو اپنے فیصلے کرنے کا حق دیا جائے ہم کسی کو بھی قبائل پر زبردستی اپنا فیصلہ نہیں ٹھونسنے دیں گے،وقت کا تقاضا ہے کہ علما ئے کرام اور تمام سیاسی جماعتیں مل کر ملک میں آئین کی بالادستی قائم کریں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعرات کے روز دارالعلوم حقانیہ اکوڑہ خٹک میں معروف مذہبی سکالر مولانا ڈاکٹر شیر علی شاہ مرحوم کی یاد میں تعزیتی ریفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہا کہ قبائلی عوام ہمارے سردار ہیں اور جو لوگ آج یہ سوال اٹھا رہے ہیں کہ قبائل کا مستقبل کیا ہوگا تو میں اس بات کا واضح الفاط میں جواب دینا چاہتا ہوں کہ قبائلی عوام کا جو بھی اپنا فیصلہ ہوگا وہی ہمارا فیصلہ ہوگا۔

مزید :

پشاور -