الیکشن کمیشن کاتحریک انصاف کو ٹف ٹائم دینے کا فیصلہ ؟ بیر ونی فنڈنگ کے شواہد پر غور شروع، آفیشل اکاونٹس اور ملازمین کی تفصیلات طلب

الیکشن کمیشن کاتحریک انصاف کو ٹف ٹائم دینے کا فیصلہ ؟ بیر ونی فنڈنگ کے شواہد ...
الیکشن کمیشن کاتحریک انصاف کو ٹف ٹائم دینے کا فیصلہ ؟ بیر ونی فنڈنگ کے شواہد پر غور شروع، آفیشل اکاونٹس اور ملازمین کی تفصیلات طلب

  

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) الیکشن کمیشن نے تحریک انصاف کے تمام آفیشل ، نجی مالیاتی اکاونٹس اور ملازمین کی تفصیلات تین دسمبر تک طلب کرلی ، الیکشن کمیشن نے تمام تفصیلات تحریک انصاف کے سابق راہنمااکبر ایس بابر کی جانب سے شواہد پیش کرنے کے بعد طلب کیں۔ میڈیارپورٹس کے مطابق الیکشن کمیشن نے اکبر ایس بابر کی جانب سے تحریک انصاف کے پارٹی فنڈ ز سے متعلق پیش کی جانے والی تفصیلات بالخصوص بیر ون ممالک سے آنے والی فنڈنگ کے شواہد پر غور کرنا شروع کردیا۔واضح رہے کہ اگر کسی سیاسی جماعت پر غیرملکی امداد لینا ثابت ہو جاتا ہے تو وہ غیر قانونی ہوگی ¾ دفعہ چھ کی ذیلی شق تین کے مطابق کوئی بھی غیر ملکی حکومت، فرم، ادارہ گروہ،کمپنیاں سیاسی جماعت کو بالواسطہ یا بلاواسطہ فنڈنگ نہیں کر سکتا ¾ سب سیکشن چار کے تحت اگر کسی سیاسی جماعت کو ایسی کوئی فنڈنگ ہوتی ہے تو یہ الیکشن کمیشن کے سامنے ثابت ہونے کے بعد ریاست پاکستان تمام فنڈنگ کو ضبط کر یگی ۔اگر الیکشن کمیشن یہ فیصلہ دے دیتا ہے کہ کسی سیاسی جماعت کو غیر ملکی فنڈنگ ہوئی ہے توسیکشن پندرہ کے تحت حکومت ایک آفیشل نوٹیفیکیشن کے اجراءکے بعد پندرہ روز کے اندر وفاقی حکومت غیر ملکی فنڈنگ کی حامل سیاسی جماعت پر پابندی کیلئے سپریم کورٹ سے رجوع کرنے کی پابند ہے۔ اگر سپریم کورٹ نے بھی الیکشن کمیشن کے فیصلہ کو برقرار رکھا تو سیاسی جماعت ختم کردی جائیگی۔

مزید :

قومی -اہم خبریں -