مکانوں ،دکانوں کے بعد خالی پلاٹوں پر بھی ٹیکس ،ایک لاکھ مالکان کیلئے شکنجہ تیار

مکانوں ،دکانوں کے بعد خالی پلاٹوں پر بھی ٹیکس ،ایک لاکھ مالکان کیلئے شکنجہ ...

  

لا ہور (جنرل رپورٹر) محکمہ ایکسا ئز نے صوبائی دارالحکومت میں مکانوں اور دکانوں کے بعد خالی پلاٹوں پر ٹیکس عائد کردیا ہے جس کی وصولی کے لئے خالی پلاٹوں کے ایک لاکھ مالکان کے خلاف شکنجہ تیار کر لیا گیا ہے جن سے پندرہ کروڑ کی وصولی کے لئے ریونیوہدف مقرر کیا گیا ہے اس کے لئے ٹیمیں تشکیل دیدی گئی ہیں جس کی تصدیق ڈی جی ایکسائز اکرم اشرف گوندل نے کی ہے جن کا کہنا ہے کہ لاہور کے اندر ایک لاکھ خالی پلاٹوں کی تفصیلات حاصل کر لی ہیں جن سے ٹیکس وصول کیا جائے گا اور اس کے لئے ٹیمیں بھی تشکیل دیدی گئی ہیں ۔ شہری خبر دار ہوجائیں،مکان اوردکان کے بعداب خالی پلاٹس پربھی ٹیکس عائدہوگا محکمہ ایکسائزنے خالی پلاٹوں کاڈیٹااکٹھاکرلیا ہے ۔تفصیلات کے مطابق لاہورمیں ایک لاکھ کے قریب خالی پلاٹ ہیں ان پلاٹوں میں10 ،5 مرلے اورایک کنال کے پلاٹ ہیں 5مرلے کے پلاٹ پر15سو روپے جبکہ10مرلے پر 31سوروپے ٹیکس عائد کیا گیاہے جبکہ ایک کنال کے پلاٹ پر7ہزارروپے ٹیکس وصول کیاجائیگا۔ڈی جی ایکسائز کے مطابق 2سال سے پرانی رجسٹری والے پلاٹس پرٹیکس عائدہوگا، اکرم اشرف گوندل کے مطابق ٹیکس کی مدمیں سالانہ15کروڑسے زائدکاریونیو جمع کرنے کا حدف مقرر کیا گیا ہے یہ ٹیکس ایک مرلہ سے ایک کنال تک کے خالی پلاٹوں پر عائد کیا گیا ہے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -