چین میں بازو میں کان اگانے کا کامیاب تجربہ

چین میں بازو میں کان اگانے کا کامیاب تجربہ
چین میں بازو میں کان اگانے کا کامیاب تجربہ

  

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک)چین میں ایک پلاسٹک سرجن نے کامیابی سے مصنوعی کان ایک شخص کے بازو میں اگانے کا کامیاب تجربہ کیا جس نے دنیا بھر کو حیران کردیا ہے۔چینی روزنامے کے مطابق یہ واقعہ چین کے صوبے شانسی کے علاقے ڑیان میں پیش آیا جہاں جی نامی شخص ایک حادثے کے نتیجے میں اپنے دائیں کان سے محروم ہوگیاتھا۔ڈاکٹر گیو شیزونگ نے متاثرہ شخص کی پسلیوں کی نرم ہڈی کو استعمال کرتے ہوئے نیا کان تیار کیا اور ابتدائی طور پر بازو میں لگا دیا۔اس شخص کی عمر بھی واضح نہیں کی گئی تاہم وہ اپنے دائیں کان کی محرومی پر بہت زیادہ مایوس تھا اور اسے لگتا تھا کہ وہ جسمانی طور پر مکمل نہیں۔مختلف طبی ماہرین سے رائے لینے کے بعد جی کو احساس ہوا کہ کان کی واپسی روایتی طبی طریقہ کار کے تحت ناممکن ہے کیونکہ دائیں کان کا ضروری حصہ غائب ہے۔ ڈاکٹر گیو اور انکی ٹیم نے ایک سکن ایکسپنڈر مریض کی دائیں کہنی میں اسے نصب کیا، دوسرے مرحلے میں پسلیوں سے نرم ہڈی لی گئی جسے کان کی شکل دیکر دائیں کہنی میں لگا دیا گیا۔تیسرا مرحلہ کچھ عرصے بعد ہوگا جب بازو میں کان مکمل ہونے کے بعد اسے سر میں منتقل کیا جائیگا۔ڈاکٹر کے مطابق دوسرا مرحلہ سب سے مشکل تھا مگر انکی ٹیم اس میں کامیاب رہی اب تیسرے مرحلے میں کان کی ٹرانسپلانٹیشن تین سے چار ماہ میں اس وقت ہوگی جب یہ مصنوعی عضو مکمل طور پر اگ جائیگا۔

مزید :

صفحہ آخر -