دھرنا سیاست کرنیوالے ناکام جب چاہیں خیبرپختونخوامیں تبدیلی لا سکتے ہیں :فضل الرحمنٰ

دھرنا سیاست کرنیوالے ناکام جب چاہیں خیبرپختونخوامیں تبدیلی لا سکتے ہیں :فضل ...

  

رحیم یار خان، صادق آباد(بیورونیوز/ڈسٹرکٹ رپورٹر، نامہ نگار)چیئرمین کشمیر کمیٹی مولانا فضل الرحمن نے رحیم یار خان میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہو کہا کہ پانامہ لیکس کامعاملہ عدالت میں ہے میڈیا کو فیصلے سنانے سے گریز کرنا چاہئے سی پیک اہم اقتصادی معاملہ ہے خیبر پختون خواہ حکومت کے سی پیک کے حوالے سے تحفظات غیر سنجیدہ ہیں اور غیر سنجیدہ تحفظات سے گریز کر ناچاہیئے انہوں نے کہا کہ کے پی کے کی حکومت نااہل ہے اور نااہل لوگوں کو حکومت نہیں بنانے دینی چاہیئے ہم پہلے دن سے ہی کہہ رہے ہیں ہمیں مل کے کے پی کے میں حکومت بنالینی چاہیئے تھی انہوں نے کہا کہ سندھ میں ایک قائم علی شاہ کے بعد دوسرے قائم علی شاہ کی ضروت تھی جو پوری ہو گئی ہے خبر لیکس پر بنائی جانی والی کمیٹی پر بات کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں اس کمیٹی پر کوئی پر اعتراضات نہیں ہیں صحافی نے سوال کیا کہ عمران خان کہتے ہیں کہ مولانا فضل الرحمن کشمیر کمیٹی کے چیئرمین ہیں اور ان کی کشمیر کے مسائل پر کوئی توجہ نہیں ہوتی جس کے جواب میں انہوں نے کہا کہ جس طرح عمران خان کی توجہ پاکستان پر نہیں ہوتی انہوں نے کہا کہ گورنر سند ھ نے اچھا وقت گذارا ہیگورنر سندھ کے بارے غیرسنجیدہ بیانات سے گریز کیا جانا چاہئے چوک چدھڑ میں تحصیل جنرل سیکرٹری حافظ سعید احمد کی رہائشگاہ پر عہدیداروں اور کارکنوں سے خطاب کرتے ہوئے مولانا فضل الرحمن نے کہا کہ جمعیت علماء اسلام ملک میں قرآن و سنت کے قانون کے نفاذ کیلئے عملی طور پر جدوجہد کر رہی ہے جمعیت کا ہر کارکن اسلام کے فروغ اور تبلیغ اسلام کیلئے خود کو وقف کر چکا ہے‘عوام کے مسائل کے حل کیلئے جمعیت علماء اسلام کے رہنماؤں اور کارکنوں کو عوام سے قریبی رابطہ برقرار رکھنا چاہیے،آئندہ الیکشن میں جے یو آئی ملک بھر میں بھرپور حصہ لے گی جمعیت علماء اسلام نے ہمیشہ اصولوں کی سیاست کی ہے کسی کو ملک میں بد امنی پھیلانے کی اجازت نہیں دی جائے گی ‘اس موقع پر ضلعی امیر جے یو آئی علامہ عبدالرؤف ربانی‘ جنرل سیکرٹری مولانا خلیل الرحمن درخواستی‘عبدالرشید لدھیانوی‘مولانا محمد یوسف‘مولانا نعمان لدھیانوی‘ قاری عامر فاروق عباسی‘ شائستہ خان‘ تحصیل امیر قاری شاہد محمود رحیمی‘حافظ غلام حسین‘مولانا عبداﷲ ربانی‘ مولانا اکرم صدیقی‘ مولانا اسماعیل فاروقی‘مولانا زبیر ڈھڈی‘مولانا یعقوب احمد‘ حافظ فیض اﷲ‘ مولانا کریم بخش‘ حافظ عبید اﷲودیگر بھی موجود تھے ۔ مولانا فضل الرحمن نے کہاکہ جمعیت علماء اسلام ملک میں نظام کی تبدیلی کیلئے جدو جہد کر رہی ہے جمعیت کا ہر کارکن خدا کی زمین پر خدا کا نظام لانے کیلئے کوشش کر رہا ہے ملک میں اسلامی نظام کے نفاذ کیلئے عملی جدوجہد کر رہے ہیں انھوں نے کہاکہ جنوبی پنجاب میں جے یو آئی کو فعال اور منظم کرنے کیلئے 15دسمبر کو رحیم یارخان میں پیغام اسلام کانفرنس کا انعقاد کیاجائیگا‘جس میں جنوبی پنجاب کے اضلاع سے تعلق رکھنے والے عہدیداران و کارکنان شرکت کرینگے ،کانفرنس جنوبی پنجاب میں جماعت کو فعال اور منظم کرنے کیلئے سنگ میل ثابت ہو گی انھوں نے مزید کہاکہ جمعیت علماء اسلام ملک میں اسلامی فروغ کیلئے عملی طور پر جدوجہد کر رہی ہے ملک میں تبدیلی اسلامی نظام کے عملا نفاذ سے ہی ممکن ہے انھوں نے کہاکہ دھرنا کی سیاست کرنیوالے ناکام ہو چکے ہیں ہم جب چاہیں صوبہ کے پی کے میں تبدیلی لاسکتے ہیں ۔ اس موقع پر مولانا فضل الرحمن نے سابق ممبر مرکزی مجلس عاملہ حاجی غلام مصطفی چدھڑ کی وفات پر انکے بیٹے حافظ سعید مصطفی چدھڑ ودیگر لواحقین سے اظہار تعزیت کرتے ہوئے دعا کی کہ اﷲ تعالی مرحوم کو اپنی جوار رحمت میں جگہ عطا فرمائے مولانا فضل الرحمن اڑھائی گھنٹے تاخیر کیساتھ چوک چدھڑ پہنچے تو ان کا پرتپاک استقبال کیا گیا۔اس موقع پر مولانا فضل الرحمن کی ایک جھلک دیکھنے کیلئے آنیوالے کارکنوں کو دھکے دیکر باہر نکال دیا گیا،مولانا فضل الرحمن قاری سعیدا حمد کی رہائش گاہ صادق آباد قیام کے بعداگلے روز خان پورکیلئے روانہ ہو گئے۔

مزید :

کراچی صفحہ اول -