ملاکنڈ کے عوام کو درپیش مسائل کے حلمیں کوئی دقیقہ فروگذاشت نہیں کرینگے :پرویز خٹک

ملاکنڈ کے عوام کو درپیش مسائل کے حلمیں کوئی دقیقہ فروگذاشت نہیں کرینگے ...

  

بٹ خیلہ (بیورورپورٹ) وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا پرویزخٹک نے کہا ہے کہ مالاکنڈ کے عوام کودرپیش مسائل کوبہترطریقے سے حل کرنے کیلئے اپنے تمام ترصلاحییتوں کوبروئے کارلاکرکسی بھی قربانی سے در یغ نہیں کریں گے مالاکنڈکے ممبران اسمبلی بھی اس سلسلے میں اپناکرداراداکریں صوبائی حکومت بھرپورتعاون کریگی ان خیالات کااظہارخیبرپختونخواکے وزیراعلیٰ پرویزخٹک نے مالاکنڈ سے قومی اسمبلی کے رکن جنیداکبرخان اورممبرصوبائی اسمبلی شکیل خان ایڈوکیٹ سے ملاقات کے دوران گفتگوکرتے ہوئے کیا اس موقع پرممبران اسمبلی نے وزیراعلیٰ کومالاکنڈکے عوام کودرپیش مسائل سے اگاہ کیاانہوں نے وفدکویقین دلایاکہ صوبائی حکومت مالاکنڈکے عوام کودرپیش مسائل کوحل کرنے کیلئے بھرپورکوشش کریگی تاکہ مالاکنڈکے عوام بھی صوبائی حکومت کے ترقیاتی کاموں سے مستفیدہوسکے انہوں نے کہاکہ مالاکنڈپی ٹی آئی کاگڑھ ہے اورمالاکنڈکے کارکنان کوکھبی بھی مایوس نہیں کریں گے ۔

پشاور (سٹاف رپورٹر) وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا پرویز خٹک نے انکشاف کیا ہے کہ صحت انصاف کارڈ ایک ہزار یونین کونسلز میں تقسیم کئے جارہے ہیں جو مستحق اور نادار افراد کو میرٹ کی بنیاد پر شفاف طریق کار کے ذریعے فراہم کئے جائیں گے ۔انہوں نے واضح کیا کہ بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام کے طریقہ کار پر کارڈ فراہم کئے جائیں گے ۔ایم پی ایز اور دیگر عوامی نمائندوں کا کردار صرف مانیٹرنگ تک محدود ہو گا۔وہ وزیراعلیٰ ہاؤس پشاور میں اعلیٰ سطح کے اجلاس کی صدارت کر رہے تھے ۔ صوبائی وزراء، چیف سیکرٹری ، سیکرٹری صحت اور دیگر متعلقہ حکام نے اجلاس میں شرکت کی۔وزیراعلیٰ نے کہاکہ صوبے کے غریب خاندانوں کے علاج معالجہ کیلئے حکومت کا یہ انقلابی اقدام ہے جس کی شفافیت کیلئے مانیٹرنگ ضروری ہے ۔ وزیراعلیٰ نے کہاکہ ایم پی ایز اپنے متعلقہ علاقے کے لوگوں کے بارے میں جان کاری رکھتے ہیں اسلئے انکی مانیٹرنگ ضروری ہے لیکن یہ مانیٹرنگ پسند و ناپسند سے بالاتر مستحقین کو انکا حق دینے کیلئے بروئے کار لائی جائے ۔انہوں نے ایم پی ایز اور دوسرے منتخب عوامی نمائندوں کو ہدایت کی کہ وہ اس پروگرام کی صرف مانیٹرنگ کریں گے جب مانیٹرنگ ہو گی تو امیر خود بخود اس پروگرام سے نکلتے جائیں گے اور غریب شامل ہوں گے ۔ ہماری حکومت حق و انصاف اور غریب کی فلاح کا ایجنڈا رکھتی ہے اس لئے ماضی میں اس طرح کے پروگراموں میں جو غلطیاں اور کو تاہیاں ہوئیں ان کا اعادہ نہیں ہونا چاہیئے ۔ حقدار کو حق دینا ہمارا منشور ہے ۔ ہم نے غریب کو سسٹم سے ریلیف دینا ہے تاکہ ان میں یہ اعتماد پیدا ہو کہ حکومتی کام کیلئے سفارش وغیر ہ کی بجائے از خود نظام کے تحت حق اور ریلیف ملے گا۔ وزیراعلیٰ نے کہاکہ انصاف کارڈ کی تقسیم میرٹ کی بنیاد پر اور بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام کے طریقہ کار کے ذریعے کی جائے گی تاکہ اس میں شفافیت برقرار رہے۔عوامی نمائندے صرف مانیٹرنگ کریں گے انہوں نے واضح کیاکہ وہ صوبائی حکومت کے اس غریب دوست اقدام کو ہر حال میں شفاف رکھنا چاہتے ہیں ۔ہم سیاسی مداخلت کے ذریعے اس کو متنازعہ نہیں بنانا چاہتے یہ خالصتاً غریب اور مستحق خاندانوں کی فلاح کا منصوبہ ہے جسے شفاف اور میرٹ پر رکھنا ناگزیر ہے ۔

مزید :

کراچی صفحہ اول -