جامعہ زکریا15 یوسف رضا گیلانی سکالر شپ منسوخ کرے: ایچ ای سی

جامعہ زکریا15 یوسف رضا گیلانی سکالر شپ منسوخ کرے: ایچ ای سی

  

ملتان(سٹاف رپورٹر) زکریا یونیورسٹی کے یوسف رضا گیلانی سکالرشپ کے بارے میں ایچ ای سی نے اپنی تحقیقاتی رپورٹ جاری کردی ہے ‘ذرائع کے مطابق رپورٹ 16صفحات پر مشتمل ہے ‘اس میں ایچ ای سی حکم نے سکالرشپ کے معاملے پر افسوس کا اظہار کیا اور یہ کہ اس معاملے میں سینڈیکیٹ کو بھی درست معلومات فراہم نہیں کی گئیں ، رپورٹ کے مطابق زکریایونیورسٹی حکام کو اسلام آباد بلا کر تحفظات کو اظہار کیا گیا اور ان نقاص کی نشاندہی کی گئی جہاں قوانین کو پامال کیا گیا ، بتایا گیا کہ کس طرح اپنوں کو نواز نے کیلئے سکینڈ ڈویژن امیدواروں کے لئے قوانین تبدیل کئے گئے ‘ ایسے امیدواروں کو بھی سکالر شپ دے دیا گیا جنھوں نے درخواست نہیں دی اور سلیکشن بورڑ میں پیش نہیں ہوئے ، 5امیدوار ایسے تھے جو سلیکشن بورڑ سے کامیاب نہ ہوسکے ‘اسی طرح زائد عمر امیدوارو ں کو بھی سکالر شپ دیدیا گیا ، ان شواہد کی روشنی میں ملکی اور عوام کے مفاد میں فیصلہ کیا گیا کہ 15سکالر شپ فوری طور پر منسوخ کردیے جائیں جن میں عمارہ اکرم کامرس، سیف اللہ کامرس ، سہیل ایاز رانا بزنس ایڈمنسٹریشن ، محمد منیر بزنس ایڈمنسٹریشن، جویریہ عباس بزنس ایڈمنسٹریشن ، بشریٰ بیگ ایڈمنسٹریشن، ہما اسماعیل بزنس ایڈمنسٹریشن، عدیل اختر بزنس ایڈمنسٹریشن، اویس مشتاق کمپوٹر سائنس ، مظفر حمید ٹیلی کمیونیکشن ، محمد جمشید مکینیکل انجینئرنگ ، سید الطاف لطیف ایگری کلچر، ماہم امتیاز سائیکلوجی اور حماد منظور اکنامکس شامل ہیں‘ ایچ ای سی حکام نے ہدایت کی کہ ان کے علاوہ بھی جو سکالر شپ دیے گئے ہیں ان پر نظر ثانی کی جائے کیونکہ ان میں بھی نوازشات کی گئی ہیں‘ خصوصاََفراست کنول کا کیس دیکھاجائے ‘ ان سکالر شپ کے بارے میں ایچ ای سی سے منظور ی بھی لی جائے ، سکالرشپ کے معاملے میں افسوس ناک بات یہ بھی سامنے آئی کہ سینڈیکیٹ یونیورسٹی کا سب سے بڑا فورم ہے ‘اس کو درست معلومات نہیں دی گئیں جیسے کے وسیم احمد اور ماہم ستار کا کیس ہے‘ اس لئے یونیورسٹی سکالرشپ اورسینڈیکٰیٹ کے ایجنڈے میں بد عنوانی کرنے والے افراد کے خلاف فوری کارروائی کرے اورایچ ای سی کو اس سے آگاہ کرے‘دریں اثنا بزوٹا کا ہنگامی اجلاس منعقد ہوا جس میں سکالر شپ کے بارے میں ایچ ای سی کی رپورٹ پر افسوس کا اظہار کیا گیا ‘اجلاس کے شرکا نے یونیورسٹی انتظامیہ سے مطالبہ کیا کہ فوری طور پر ایچ ای سی کی ہدایت کے مطابق انکوائری کمیٹی بنائی جائے اور فراڈ کرنے والوں کے خلاف کارروائی کی جائے جبکہ میرٹ پر سکالرشپ حاصل کرنے والے سکالرز کو جلدازجلد فنڈز جاری کئے جائیں۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -