کراچی میں روزگار پر پہلے مقامی افراد کا حق ہے: ڈاکٹر سلیم حیدر

کراچی میں روزگار پر پہلے مقامی افراد کا حق ہے: ڈاکٹر سلیم حیدر

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر) مہاجر اتحاد تحریک کے چیئرمین ڈاکٹر سلیم حیدر نے کہا ہے کہ فوری طورپر سندھ میں دیہی شہری تفریق کوٹہ سسٹم ختم کرکے ملازمتوں میں مہاجروں کو برابری کی بنیاد پر کوٹہ دیا جائے۔ انہوں نے کہاکہ اب تک پیپلزپارٹی نے مہاجروں کے ساتھ دھوکہ دہی کی ہے ۔ سندھ میں سب سے زیادہ نقصان مہاجروں کو پیپلزپارٹی کے متعصبانہ سوچ کی وجہ سے پہنچا ہے۔ اب بھی حکومت کراچی جیسے شہر کو کچھ دینے کو تیا رنہیں۔ اس کے برعکس سندھ کے چھوٹے چھوٹے قصبوں اور دیہاتوں کو اربوں روپے کے فنڈز دیئے جارہے ہیں ۔ ورلڈ بینک اور بین الاقوامی اداروں کی کراچی کے حوالے سے رپورٹیں موجودہ حکمرانوں کی آنکھیں کھول دینے کیلئے کافی ہیں۔ سب سے زیادہ ٹیکس اور ریونیو دینے والا یہ شہر آج جس طرح بدحالی کا شکار ہے وہ کسی سے پوشیدہ نہیں۔ انہوں نے کہاکہ کراچی میں سرکاری اور نیم سرکاری اداروں میں مقامی افراد کو روزگار دیا جائے۔ باہر سے آنے والوں کا روزگار کے اوپر بعد میں حق بنتا ہے سب سے پہلے کراچی کی مقامی آبادی کو روزگار دینا جانا چاہئے۔ انہوں نے کہاکہ آج سندھ تباہی کے دھانے پر پہنچ گیا ہے اس کی ذمہ دار پیپلزپارٹی کی حکومت ہے۔ پیپلزپارٹی کے وزراء، مشیر جوکہ دیہی علاقوں سے تعلق رکھتے ہیں کراچی میں بیٹھ کر کراچی کے وسائل میں لوٹ مار میں مصروف ہیں۔ سندھ سیکریٹریٹ سے لے کر تمام سرکاری ادارے اندرون سندھ کے کرپٹ افسران کی لوٹ مار کی نظر ہوچکے ہیں۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -