خیبرپختونخوا پولیس فورس کی کارکردگی دیگر صوبوں سے بہتر ہے :میاں جمشید الدین

خیبرپختونخوا پولیس فورس کی کارکردگی دیگر صوبوں سے بہتر ہے :میاں جمشید الدین

  

پشاور (پاکستان نیوز) خیبر پختونخوا کے وزیر برائے ایکسائز و ٹیکسیشن اور انسداد منشیات میاں جمشید الدین کاکا خیل نے کہا ہے کہ خیبر پختونخوا پولیس کی تفتیشی نظام کو جدید خطوط پر استوار کرنے اور پولیس افسران کو پیشہ ورانہ مہارت سے لیس کرنے کیلئے صوبائی حکومت نے قابل تقلید اقدامات اٹھائی ہیں تاکہ بہتر تفتیش کی بدولت عوام کو انصاف کی فراہمی یقینی بنائی جا سکے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعہ کے روز حیات آباد پشاور میں پولیس سکول آف انوسٹی گیشن میں سیلولر فرانزک کورس اور میڈیکو لیگل رپورٹنگ اینڈ ڈی این اے اورینٹیشن ورکشاپ کے اختتامی تقریب سے بحیثیت مہمان خصوصی خطاب کرتے ہوئے کیا ۔میاں جمشید الدین نے کہا کہ انسپکٹر جنرل آف پولیس خیبر پختونخوا ناصر خان درانی اورڈپٹی انسپکٹر جنرل آف پولیس ٹریننگ کی مختصر مدت میں پولیس فورس کو جدید خطو ط پر استوار کرنے کی کاوشیں قابل تحسین ہیں اور مجموعی طور پر پولیس فورس کی کارکردگی دیگر صوبوں کی نسبت مثالی بنانے کیلئے انہوں نے صوبائی حکومت کے منصوبوں پر عمل درآمد کیا۔صوبائی وزیر نے تربیت حاصل کرنے والے پولیس افسران کو مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہا کہ ان سے توقع کی جاتی ہے کہ وہ اپنے حاصل کردہ تربیت کی روشنی میں نہ صرف پولیس کی ساکھ کو مزید بہتر بنائیں گے بلکہ عام لوگوں کو انصاف کی فراہمی میں بھی کلیدی کردار اداکریں گے۔قبل ازیں ڈائریکٹر پولیس سکول آف انوسٹی گیشن (ریٹائرڈ) گروپ کیپٹن سہیل اختر نے صوبائی وزیر کو بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ جون2014سے لے کر اب تک کے قلیل عرصہ میں سکول ہذا کل 131پیشہ ورانہ کورسز کرواچکی ہے جس میں 2832کے مختلف رینکس کے افسران تربیت حاصل کر چکے ہیں اور یہ بات قابل ذکر ہے کہ دیگر صوبوں میں اس قسم کی تربیتی سکول نہیں ہے۔دریں اثنا صوبائی وزیر نے سکول آف انوسٹی گیشن کے لیبارٹری کا بھی معائنہ کیا اور جدید تفتیش کے حوالے سے آگاہی حاصل کی ۔بعد آزاں صوبائی وزیر نے تربیت مکمل کرنے والے پولیس فورس کے مختلف رینکس کے افسران میں اسناد تقسیم کئے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -