جندول کالج لیکچررز کا روزانہ ایک گھنٹہ تدریس کا بائیکاٹ

جندول کالج لیکچررز کا روزانہ ایک گھنٹہ تدریس کا بائیکاٹ

  

جندول(نمائندہ پاکستان)کالج لیکچرر ایسوسی ایشن نے مطالبات منظور نہ ہونے پر روزانہ ایک گھنٹہ تدریسی کلاسوں سے بائیکاٹ کا اعلان کر دیا ، اس سلسلہ میں گذشتہ روز گورنمنٹ غازی عمراں خان ڈگری کالج جندول ثمر باغ میں کالج لیکچرر ایسوسی ایشن کا اجلاس زیر صدارت صوبائی صدر نصراللہ خان ہوا جس میں درجنوں لیکچرر ان نے شرکت کی صوبائی صدر کا کہنا تھا کہ انہوں نے 31اکتور کو مطالبات کی منظوری کیلئے بازوں کے گرد کھالی پٹیاں باندھ کر علامتی احتجاج شروع کیاتھا تاہم گذشتہ روز صوبائی وزیر اعلیٰ پرویز خٹک سے ملاقات کے دوران انہوں نے مطالبات ماننے سے انکار کر دیا اس موقع پر انہوں نے اعلان کر دیا کہ 16نومبر تک تمام سرکاری کالجز کے اساتذہ روزانہ ایک گھنٹہ تدریسی کلاسوں کا بائیکاٹ کرینگے اور اگر حکومت نے ان کی اپ گریڈیشن ،ہارڈ ایریاں الاونس اور ٹیچنگ الاونس کی منظوری کے مطالبات منظور نہیں کئے تو لیکچرر ایسوسی ایشن کی ایکشن کمیٹی کے احکامات کی روشنی میں آئندہ کیلئے لائحہ عمل کا اعلان کیا جائے گا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -