کرم ایجنسی میں قبائلیوں کا وفاقی حکومت کیخلاف مطاہرہ

کرم ایجنسی میں قبائلیوں کا وفاقی حکومت کیخلاف مطاہرہ

  

پارا چنار (نمائندہ پاکستان) کرم ایجنسی کے ہزاروں قبائل کا علماء کی قیادت میں وفاقی حکومت کے خلاف احتجاجی مظاہرہ ، علامہ شیخ محسن نجفی کے خلاف اقدامات واپس لینے اور شیعہ نسل کشی بند کرنے کا مطالبہ کیا۔مرکزی جامع مسجد پاراچنار سے خطیب علامہ فداحسین مظاہری اور دیگر علماء کی قیادت میں ہزاروں قبائل نے وفاقی حکومت کی پالیسیوں کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا گیا۔ مظاہرین مسجد روڈ ، کشمیر چوک اور دیگر مقررہ راستوں سے ہوتے ہوئے پریس کلب پہنچے جہاں احتجاجی مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے طوری بنگش قبائل کے رہنما حاجی فقیر حسین ، علامہ خیال حسین دانش ، کیپٹن (ر) یوسف حسین ، زاہد حسین اور دیگر مقررین کے نے کہا کہ علامہ شیخ محسن نجفی محسن انسانیت ہیں ان کے تعلیمی اداروں میں 30 ہزار سے زائد طلبہ پڑھ رہے ہیں اور بیس ہزار فارغ ہوچکے ہیں ہزاروں زلزلہ متاثرین کی امداد کی ان کی شہریت ختم کرنا وفاقی حکومت کی بوکھلاہٹ ہے حکومت فوری طوور پر انہیں پر امن شہری قرار دے دیں اور ان کے اکاونٹ کھولے جائیں۔ شیعہ علماء اور رہنماوں کے خلاف ظلم اور ناانصافی کا سلسلہ بند کیا جائے اور شیعہ نسل کشی کا سلسلہ روکنے کیلئے اقدامات اٹھائے جائیں۔ مقررین نے نیشنل ایکشن پلان کی حمایت کرتے ہوئے اسے نیک شگون قرار دیا مگر ساتھ یہ بھی مطالبہ کیا کہ نیشنل ایکشن پلان کی تحت دھشت گردوں کے خلاف کاروائی کی جائے اور پرامن شہریوں کو تنگ نہ کیا جائے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -