کوہاٹ میں ڈی ای او رشوت لیتے ہوئے رنگے ہاتھوں گرفتار

کوہاٹ میں ڈی ای او رشوت لیتے ہوئے رنگے ہاتھوں گرفتار

  

کوھاٹ (بیورو رپورٹ) ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر کوھاٹ ایک کلرک کے ہمراہ رنگے ہاتھوں رشوت لیتے ہوئے گرفتار‘ ایک لاکھ 80 ہزار روپے کی رقم برآمد‘ محکمہ اینٹی کرپشن کوھاٹ نے مقدمہ درج کر لیا تفصیلات کے مطابق سیدا مین ولد خان وزیر پستہ سنڈہ اور عبدالجلیل ولد محمد رفیق سکنہ شادی پور نے سول جج کوھاٹ کی عدالت میں درخواست دی کہ ان سے محکمہ تعلیم میں بھرتی کے لیے ڈی ای او کوھاٹ گوہر علی خان اور کلرک فضل الرحمن ایک لاکھ 80 ہزار روپے کی رشوت کا مطالبہ کر رہے ہیں جس پر انہیں نوٹوں پر نشان لگا کر متعلقہ حکام کو دینے پر آمادہ کیا گیا سول جج منصور شاہ بخاری نے مطلوبہ رقم وصول کرنے کے بعد محکمہ اینٹی کرپشن کوھاٹ کے اسسٹنٹ ڈائریکٹر علی حسن کے ذریعے نشان زدہ نوٹ 90 ہزار ڈی ای او گوہر علی خان اور 90 ہزار روپے کلرک فضل الرحمن سے برآمد کر کے دونوں کو رنگے ہاتھوں گرفتار کر کے تھانہ میں بند کر دیا اور ان کے خلاف رشوت ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کر کے مزید تحقیقات شروع کر دیں۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -