24 لاکھ بچے شدید غذائی قلت کا شکار، ہیلتھ ایمرجنسی نافذ

24 لاکھ بچے شدید غذائی قلت کا شکار، ہیلتھ ایمرجنسی نافذ
24 لاکھ بچے شدید غذائی قلت کا شکار، ہیلتھ ایمرجنسی نافذ

  

پشاور (ویب ڈیسک) خیبر پی کے میں 24 لاکھ بچے شدید غذائی قلت کا شکار ہیں۔ صوبے میں ہیلتھ ایمرجنسی نافذ کر دی گئی ہے۔ صوبائی حکومت نے 17 ملین ڈالرز کا پروگرام وفاقی حکومت کو منظوری کیلئے بھیج دیا۔ محکمہ صحت کے مطابق صوبے کے تمام ہسپتالوں میں 500 سینٹرز بنائے جائیں گے جہاں سے غذائی قلت کے شکار بچوں کیلئے فوڈ سپلیمنٹ دئیے جائیں گے۔

روزنامہ پاکستان کی تازہ ترین اور دلچسپ خبریں اپنے موبائل اور کمپیوٹر پر براہ راست حاصل کرنے کیلئے یہاں کلک کریں‎

علاوہ ازیں آسٹریلوی حکومت کے تعاون سے ہنگامی پروگرام شروع کیا جا رہا ہے۔ نیشنل نیو ٹریشنل سروے کے مطابق خیبر پی کے میں 5 سال سے کم عمر کے 17 فیصد بچے سوکھے کا شکار ہیں۔ سوکھے پن کا تناسب 15 فیصد سے زیادہ ہونا انتہائی تشویشناک ہے۔

مزید :

پشاور -