پنجاب پولیس کا رات گئے نرسز ہاسٹل پر چھاپا

پنجاب پولیس کا رات گئے نرسز ہاسٹل پر چھاپا
پنجاب پولیس کا رات گئے نرسز ہاسٹل پر چھاپا

  

لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک ) پنجاب پولیس نے رات گئے نرسز ہاسٹل پر چھاپا مار ا اور انہیں ہراساں کیا ۔

سماءٹی وی کے مطابق ہڑتالی نرسوں کے خلاف پنجاب پولیس ایکشن میں آگئی ، رات گئے میو ہسپتال کی نرسز کے ہاسٹل میں چھاپا مارا گیا اور انہیں بری طرح حراساں کیا گیا ، پولیس اہلکار نرسوں کے کمروں میں گھسے اور خواتین کو باہر نکال دیا ۔ میو ہسپتال انتظامیہ نے خبر پر بیان دیتے ہوئے کہا ہے کہ پولیس کی جانب سے نرسز ہاسٹل پر کوئی کارروائی نہیں کی گئی ۔

چین سے پہلا تجارتی قافلہ خنجراب کے راستے گوادر پہنچ گیا

ایک نرس نے سماءٹی وی سے بات کرتے ہوئے الزام عائد کیا ہے کہ پنجا ب حکومت ہمیں حراساں کر رہی ہے ، رات گئے نرسز ہاسٹل پر چھاپا مارا گیا ۔ چھاپا مار کارروائی میں جینٹس پولیس کے ساتھ ایم ایس میو ہستپال کا رائٹ ہینڈ بشارت نامی شخص بھی موجود تھا جنہوں نے خواتین پر تشدد کیا اور کمروں میں گھس گئے ۔

نرس کا مزید کہنا تھا کہ پولیس اہلکاروں کو دیکھ کر کچھ لڑکیاں فرار ہونے میںکامیاب ہو گئی جبکہ متعدد نرسوں کا تاحال کچھ پتہ نہیں ہے کہ انہیں گرفتار کر کے کہاں لیجایا گیا ہے ۔ ”اگر انہوں نے ہمیں گرفتار ہی کرنا ہے تو یہاں آکر کریں کمروں میںاکر تشدد کیوں کیا جا رہا ہے ؟ کیا ہم کسی کی بیٹیاں یا بہنیں نہیں ہیں ؟

مزید :

لاہور -