’پاک چین اقتصادی راہداری منصوبے میں یہ کام ہم سے کروالو‘جرمنی نے بھی تاریخی منصوبے کا حصہ بننے کی خواہش ظاہر کردی ،پاکستانیوں کے لیے خوشخبری آگئی 

’پاک چین اقتصادی راہداری منصوبے میں یہ کام ہم سے کروالو‘جرمنی نے بھی تاریخی ...
’پاک چین اقتصادی راہداری منصوبے میں یہ کام ہم سے کروالو‘جرمنی نے بھی تاریخی منصوبے کا حصہ بننے کی خواہش ظاہر کردی ،پاکستانیوں کے لیے خوشخبری آگئی 

  

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک)اربو ں ڈالر کا پاک چین اقتصادی راہداری منصوبہ بین الاقوامی سرمایہ کاروں کی توجہ کا مرکز بن گیا ہے اور اب جرمنی بھی اس پراجیکٹ کا حصہ بننے کے لیے پر طول رہا ہے ۔

میڈ یا رپورٹس کے مطابق جرمن سفارتکار اینا لیپل نے کہا ہے کہ پاکستان میں جرمنی کے سرمایہ کاروں کو لانا مشکل ہے تاہم سیکیورٹی صورتحال بہتر ہونے پر جرمن سرمایہ کار پاکستان میں سرمایہ کاری کے لیے آسکتے ہیں ۔ جرمنی کی سفارتکار نے فیڈریشن آف پاکستان کامرس اینڈ انڈسٹری کے چیئر مین عبد الرﺅف عالم سے ملاقات کی ۔

چین سے پہلا تجارتی قافلہ خنجراب کے راستے گوادر پہنچ گیا

اس موقع پر عبدالرﺅف عالم نے دعویٰ کیا کہ جرمنی اقتصادی راہداری منصوبے میں توانائی کے شعبے میں سرمایہ کاری کی خواہش رکھتا ہے ۔ادھر جرمن سفارکتار اینا لیپل نے کہا کہ توانائی کے نئے ذرائع اور انرجی کو محفوظ کرنے پر توجہ ہے تاکہ ملک میں توانائی کے مسائل کو ختم کیا جا سکے ۔ان کا کہنا تھا کہ ایک دہائی سے زیادہ عرصے کے دوران توانائی کے مسائل نے پاکستان کی معیشت پر برا اثر ڈالا ہے ،اب وقت آگیا کہ اس مسئلے کا حل تلاش کیا جائے ۔انہوں نے کہا کہ ابھی جرمنی کی کمپنیوں کو مسائل کا سامنا ہے جو جلد ہی ختم ہو جائیں گے ۔ملاقات کے دوران عبد الروف نے جرمن سفارتکار کی توجہ دونوں ملکوں کے درمیا ن براہ راست پروازیں چلانے پر بھی کرائی اور خواہش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ جرمنی کے سرمایہ کار پاکستان کے مختلف شعبوں میں سرمایہ کاری کریں ۔

مزید :

قومی -