شمالی اور جنوبی کشمیر میں فوجی آپریشن کے دوران پلوامہ سے 6 نوجوان گرفتار

شمالی اور جنوبی کشمیر میں فوجی آپریشن کے دوران پلوامہ سے 6 نوجوان گرفتار

سری نگر(کے پی آئی) بھارتی فورسز نے جنوبی کشمیر کے شوپیاں اور پلوامہ اضلاع کے درجنوں دیہات کا محاصرہ کر لیا ہے اس دوران پلوامہ سے 6 نوجوان گرفتار کر لیا ہے اس دوران پولیس چوکی بس سٹینڈ اننت ناگ پر گولیاں چلائی گئیں پولیس نے جواب میں بھی گولیاں چلائیں پولیس اور نیم فوجی دستوں نے علاقے کا محاصرہ کرلیا اور جبکہ ڈسٹر کٹ پولیس لائنز اونتی پورہ کے نزدیک مشکوک نقل وحرکت دیکھنے کے بعد فورسز اہلکاروں نے ہوائی فائرنگ کردی ۔ادھر حاجن اور پاسی پورہ پلوامہ میں اس وقت تشدد بھڑک اٹھا جب فوج وفورسز نے بانگر محلہ حاجن اور لاسی پورہ کا کریک ڈاؤن کیا ۔دریں اثناء شوپیان میں ایک پرانا ہینڈ گرینیڈ کو بم ڈسپوزل اسکارڈ نے ناکارہ بنادیا ۔ جنوبی ضلع کولگام کے قاضی گنڈ علاقے میں اس وقت خوف ودہشت کی لہر دوڑ گئی جب پولیس کی ایک گاڑی پر فائرنگ کی گئی ۔جسکے نتیجے میں ایس پی او اہلکار زخمی ہوا تھا ۔ حاجن بانڈی پورہ میں صبح اس وقت تشدد بھڑک اٹھا جب یہاں فوج وفورسز نے بانگر محلہ کا کریک ڈاؤن شروع کیا۔ جونہی علاقے میں کریک ڈاؤن کی خبر پھیلی ،تو نوجوانوں کی ٹولیاں مختلف سمت سے سڑکوں پر نمودار ہوئیں اور کارڈن اینڈسرچ آپریشن میں رخنہ ڈالتے ہوئے احتجاجی مظاہرے کئے اور فورسز پر شدید خشت باری کی ۔جوابی کارروائی کے دوران فورسز نے مشتعل مظاہرین کو تتر بتر کرنے کیلئے ٹیر گیس شلنگ کی ۔

یہ سلسلہ کئی گھنٹوں تک جاری رہا ۔ فوج وفورسز نے ہانجی بگ ما گام بڈ گام میں کریک ڈاؤن کرکے تلاشی کارروائی عمل میں لائی لوگوں نے مزاحمت کی اور فورسز پر پتھراؤ کیا ۔جوابی کارروائی میں فورسز نے ٹیر گیس شلنگ کی ۔ آخری اطلاعات ملنے تک یہ سلسلہ جاری تھا ۔

مزید : عالمی منظر