نواز شریف کی واپسی ناممکن ، شہباز بھی جانے کی تیاری کریں ، عمران خان

نواز شریف کی واپسی ناممکن ، شہباز بھی جانے کی تیاری کریں ، عمران خان

 تونسہ شریف (مانیٹرنگ ڈیسک ) چیئرمین پاکستان تحریک انصاف عمران خان نے ایک مرتبہ پھر کہا ہے پاکستان میں حکومت نام کی کوئی چیز نہیں فوری طور پرنئے انتخابات کروائے جائیں، نواز شریف نااہل ہوگیا اب شہبا ز شریف کی باری ہے،حدیبیہ پیپرز مل کا کیس کھل گیا ہے ، جو شخص ملک کا 300ارب روپے لوٹ کر باہر لے گیا وزیراعظم اسے 40,40 گا ڑ یوں کا پروٹوکول دے رہے ہیں،لگتا ہے شاہد خاقان عباسی کی اخلاقیات مر گئی ہیں یا وہ بھی اسکی طرح کرپٹ ہیں ، ہم حکومت میں آکر ایسا نظام بنائیں گے جس میں امیروں کو ٹیکس نیٹ کے اندر لایا جا ئے ،غریبوں کو ریلیف دینگے ، بڑے کرپٹ لوگ نواز شریف، آصف زرداری، شہباز شریف اور اسحاق ڈار جیسے لوگوں کو پکڑ کر جیلو ں میں ڈالیں گے اور پیسہ واپس لائیں گے۔انسانوں اور جانوروں کے معاشرے میں سب سے بڑا فرق انصاف کا ہوتا ہے۔ جانوروں کے معاشرے میں عدل و انصاف نہیں ہوتا، جو کمزور ہوتا ہے وہ بھوکا مرجاتا ہے۔ہفتہ کے روز تونسہ شریف میں جلسہ عام سے خطاب میں انکا مزید کہنا تھا میرے نوجوانوں کو ہر ایشو کی سمجھ ہے، آج یہ قوم جاگی ہوئی ہے اور ملکی مسائل کو سمجھتی ہے ، پنجاب کا 60فیصد ڈویلپمنٹ فنڈ لاہور پر خرچ ہوتا ہے، لاہور میں شریف خاندان کا تخت ہے، سب سے زیادہ پیسہ وہاں خرچ ہوتا ہے، مگرلاہورمیں اتنی آلودگی ہے کہ دس فٹ تک کچھ نظر نہیں آتا، ہر چیز پر 17فیصد ٹیکس کاٹا جاتا ہے۔ ہم دیہات میں روزگار فراہم ، تونسہ میں نمل یونیورسٹی جیسا کالج قائم کرینگے ، حکمرانوں نے ڈیزل کی قیمت 5روپے اور بڑھا دی ہے ،عوام سے 90فیصد ٹیکس جمع کیا جاتا ہے،ملک سے ایک ہزار ارب روپے منی لانڈرنگ سے باہر بھیجا جاتا ہے، ملک میں طاقتور لوگ ٹیکس نہیں دیتے اور منی لانڈرنگ کرتے ہیں، ملک میں ڈالر کی کمی کے باعث آئی ایم ایف سے قرضہ لینا پڑتا ہے اور قرضہ کی قسطیں ادا کرنے کیلئے عوام پر ٹیکس لگادیا جاتا ہے، پیسہ باہر جانے سے نوکریاں بھی باہر دستیاب ہوتی ہیں۔جس کا پیسہ اور جینا مرنا پاکستان میں نہ ہو آپ نے اسے ووٹ نہیں دینا، ہر مہذب معاشرے میں جب کوئی کرپشن کے الزام میں پکڑا جاتا ہے تو لوگ اس کا سوشل بائیکاٹ کرتے ہیں اور میل جول نہیں رکھتے، انکاکہنا تھا امریکی اہلکار نے بھارت میں کہا ہے پاکستان کی حکو مت اتنی کمزور ہے کہ اس سے معاہدے نہیں کئے جاسکتے، وہ کون سا ملک ہے جہاں عدلیہ پر تنقید ہوتی ہے، میں ججز کو سلام پیش کرتا ہوں، وزیراعظم سعودی عرب کا اقامہ لے کر بیٹھے ہیں،ہم قائد اعظم کا پاکستان بنائینگے۔

عمران خان

مزید : صفحہ اول