بھارت نے طاقت سے قتل و غارتگری شروع کر رکھی ہے ، گلزمان اعوان

بھارت نے طاقت سے قتل و غارتگری شروع کر رکھی ہے ، گلزمان اعوان

مظفرآباد(بیورورپورٹ) کشمیر کا بھارت سے کوئی تعلق نہیں تھا ،بھارت نے طاقت سے قتل و غارتگری شروع کر رکھی ہے 85فیصد آبادی مسلمانوں کی تھی، اس کی سرحدیں پاکستان کے ساتھ ملتی تھیں، 575ریاستیں تقسیم ہند سے قبل موجود تھیں۔ تقسیم ہند کی گائڈ لائنز کے مطابق جموں کشمیر بھارت کا کسی بھی صورت میں کوئی حصہ نہیں بنتا تھا، مگر طاقت کے بے تحاشا استعمال سے نومبر 1947ہی میں 5لاکھ لوگوں کا خون بہایا گیا اور جموں کشمیر پر بھارت نے غارت گری کا کھیل کھیلا۔ان خیالات کا اظہار پاکستان مسلم لیگ ن آزادکشمیر کے مرکزی نائب صدرمیجر(ر) گلزمان اعوان نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ جموں کشمیر کے عوام کے قتل وغارت گری پر معمور فورسز کو کھلے عام شاباشی دی جارہی ہے اور وہاں کے جوانوں کی اسلام اور آزادی سے وابستگی کو گمراہی کا نام دیا جارہا ہے۔انہوں نے کہا کہ جوانوں کو خوف ودہشت کا شکار بنایا جارہا ہے اور انہیں مختلف جیلوں میں ڈال کر خوف زدہ کیا جارہا ہے۔ قربانیوں کے حوالے سے ہر گھر ایک تاریخ ہے، کشمیر کے عوام نے تحریک آزادی کے لیے بے مثال قربانیاں پیش کی ہیں، مگر بھارت ظلم وجبر اور طاقت کے سہارے کشمیریوں کو سرنڈر کروانا چاہتا ہے، کبھی پیلٹ کے قہر سے، تو کبھی جوانوں اور بزرگوں کو قتل کر کے یا جیلوں میں بند کرکے۔انہوں نے کہا آزادکشمیر کے عوام کو تحریک آزادی کشمیر کے لئے کوئی بھی قربانی دینا پڑے ہم دریغ نہیں کریں گے، مگر بھارتی جبر کے آگے نہیں جھکیں گے۔

مزید : کراچی صفحہ اول