انسانی حقو ق کی صورتحال تشویش ناک

انسانی حقو ق کی صورتحال تشویش ناک

اسلام آباد(آئی این پی)پاکستان پیپلزپارٹی کے راہنما سینیٹر فرحت اللہ بابر نے کہا ہے کہ پاکستان میں انسانی حقو ق کے حوالے سے صورتحال تشویش ناک ہے، جنیوا میں اقوام متحدہ پاکستان میں انسانی حقوق کے حوالے سے صورتحال کا جائزہ لیا جائے گا اور اس وقت یہ صورتحال نہایت تشویشناک ہے کہ ریاست کی جانب سے شہریوں کے انسانی حقوق کو انتہائی خطرات لاحق ہیں، سائبر کرائمز ایکٹ 2016ء قومی سلامتی کے نام پر مخالفت کو دبانے کے لئے غلط طور پر استعمال کیا جا رہا ہے، انہوں نے مطالبہ کیا ہے کہ سزائے موت پر ایک وسیع بحث و مباحثہ شروع کیا جائے، زبردستی غائب کرنے کے عمل کو مجرمانہ قرار دیا جائے اور انٹرنمنٹ سنٹر میں جو لوگ حراست میں رکھے گئے ہیں ان کی مکمل تفصیل سال کے اختتام سے قبل عوام کے سامنے رکھی جائے، ان اقدامات سے نہ صرف پاکستان میں انسانی حقوق کا ریکارڈ بہتر ہوگا بلکہ پاکستان کی ساکھ بھی بہتر ہوگی۔ہفتہ کو انہوں نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ پیر کے روز جینوا میں اقوام متحدہ تمام رکن ممالک سے انسانی حقوق کی رپورٹوں پر سوال و جواب کرے گی اور ان سے یہ بھی پوچھے گی کہ انہوں نے جو وعدے مختلف اقدامات اٹھانے کے لئے کئے تھے ان پر کیا پیش رفت ہوئی؟ اس اجلاس میں پاکستان کی نمائندگی وزارت انسانی حقوق کا ایک وفد کرے گا جس کی سربراہی وزیر خارجہ خواجہ آصف کریں گے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...