سرائیکی صوبہ وفاق کی ضرورت،ن لیگ بھی مخالف نہیں، ڈاکٹر افضل ڈھا نڈلہ

سرائیکی صوبہ وفاق کی ضرورت،ن لیگ بھی مخالف نہیں، ڈاکٹر افضل ڈھا نڈلہ

ملتان (سٹی رپورٹر)سرائیکی صوبہ وفاق پاکستان کی ضرورت ہے ‘میں ذاتی طور پر ہمیشہ صوبے کے حق میں رہا ہوں ۔ ہماری جماعت بھی صوبے کے خلاف نہیں ہے ۔ان خیالات کااظہار ن لیگ کے رہنما و رکن قومی اسمبلی ڈاکٹر افضل خان ڈھانڈلہ نے سرائیکستان قومی کونسل کے چیئرمین پروفیسر (بقیہ نمبر36صفحہ7پر )

شوکت مغل اور صدر ظہور دھریجہ سے ملاقات کے دوران کیا ۔ اس موقع پر معروف ادیب باسط بھٹی ‘ الطاف خان ‘ زبیر دھریجہ اور دوسرے موجود تھے ۔ انہوں نے کہا کہ صوبہ تو ایک دن بننا ہے ۔ دیکھنا یہ ہے کہ اس کا کریڈٹ کس خوش نصیب کے حصے میں آتا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب کی تقسیم ن لیگ کے منشور میں بھی درج ہے اور پنجاب اسمبلی سے قرارداد بھی پاس کرائی گئی ۔ اس سے ثابت ہوا کہ ن لیگ صوبے کی مخالف نہیں ۔ تاخیر تو ہو سکتی ہے لیکن یہ نہیں ہو سکتا کہ صوبہ نہ بنے ۔ سرگودھا یونیورسٹی اور گومل یونیورسٹی میں سرائیکی شعبے کے مطالبے پر ڈاکٹر افضل خان ڈھانڈلہ نے کہا کہ آپ مجھے ڈیمانڈ بنا دیں سرائیکی شعبہ بنوانے کیلئے بھرپور کوشش کروں گا ۔ انہوں نے کہا کہ اسمبلیوں کی مدت ختم ہو رہی ہے وسیب کے حصے میں اہم وزارتیں آئی ہیں ۔ وزیر مواصلات حافظ عبدالکریم ملتان ڈی جی خان موٹروے بنوا رہے ہیں ۔ بہت اچھا ہوگا کہ وہ ملتان میانوالی براستہ ڈی آئی خان موٹر وے بنوا دیں ۔ انہوں نے کہا کہ میں سی ایس ایس کے الگ کوٹے اور سی ایس ایس میں سرائیکی مضمون کی شمولیت کی بھرپور کوشش کروں گا ۔ اس سلسلے میں وسیب کے دوسرے ارکان اسمبلی بھی میرا ساتھ دیں گے تو ہم اپنے مقصد میں کامیاب ہو جائیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ میں ہر سال گوہر والا میں سرائیکی مشاعرہ کراتا ہوں اور سرائیکی ہماری ماں بولی ہے ۔ ہم اس کی ترقی کیلئے ہر طرح کی جدوجہد کا حق رکھتے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ سرائیکستان لانگ مارچ کے دوسرے مرحلے میں آپ بھکر میں ہماری دعوت قبول کریں ۔ ہم آپ کا استقبال کریں گے ۔

مزید : ملتان صفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...