ضلع کے حساس ترین کینٹ سرکل میں55فیصد پولیس نفری کی کمی کا انکشاف

ضلع کے حساس ترین کینٹ سرکل میں55فیصد پولیس نفری کی کمی کا انکشاف

ملتان(کرائم رپورٹر) ضلع کا حساس ترین کینٹ سرکل 55 فیصد پولیس نفری کی کمی کا انکشاف، 130 پولیس افسران و اہلکاروں کی سیٹیں خالی، نفری کی کمی کے باعث تھانہ کے معمولات، گشت، انوسٹی گیشن بھی متاثرہوکر رہ گئی۔معلوم ہوا ہے کہ کینٹ سرکل تین تھانوں پر مشتمل ہے،اس میں تھانہ کینٹ،جلیل آباد اور چہلیک شامل ہیں مذکورہ تھانوں میں مجموعی طور پر منظور شدہ 244 آسامیوں پر صرف (بقیہ نمبر70صفحہ12پر )

114 افسران و اہلکار تعینات ہیں۔ تھانوں کی سطح پر دیکھا جائے تو تھانہ کینٹ میں 107 پولیس آسامیوں پر صرٖف 46 افسران و اہلکار ،تھانہ چہلیک کی منظور شدہ نفری 91 افسران و اہلکاروں پر مشتمل،صرف 44 اہلکار جبکہ تھانہ جلیل آباد کی منظور شدہ نفری 47 جبکہ تعینات 24 افسران و اہلکار تعینات ہیں۔ سرکل میں ہائیکورٹ، ضلع کچہری، نشتر ہسپتال، 7سے زائد میڈیا دفاتر، کارڈیالوجی ہسپتال، کنٹونمنٹ کا علاقہ شامل ہے،علاوہ ازیں پولیس لائنز، ضلعی و ریجنل انتظامیہ و پولیس افسران کی رہائش گاہیں بھی کینٹ سرکل میں ہیںیہی نہیں ائیر پورٹ، ریلوے سٹیشن، ریڈیو پاکستان، چلڈرن ہسپتال، سول ہسپتال سمیت اہم دفاتر اس سرکل میں ہیں۔ ملتان آمد پر اکثر غیر ملکی بھی اس علاقے میں رہائش پذیر رہتے ہیں۔ایک محتاط اندازے کے مطابق کینٹ سرکل کی آبازی 6لاکھ قریب ہے۔تاہم کمی نفری کی وجہ سے جرائم میں اضافہ دیکھنے میں آیا ہے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر