لڑکوں سے چوری، بدفعلی، ڈکیتی کرانے والا سرغنہ پکڑا گیا

لڑکوں سے چوری، بدفعلی، ڈکیتی کرانے والا سرغنہ پکڑا گیا

گوجرانوالہ (ویب ڈیسک) بدنام زمانہ دہشت کی علامت عاطف عرف عاطی، درجنوں سنگین مقدمات میں ملوث بھتہ خوری قتل اقدام قتل دوران ڈکیتی عورتوں کے ساتھ حرام کاری کرنے والے کو سی آئی اے پولیس نے دن رات کی محنت کے بعد گرفتار کرلیا، ملزم عاطف عرف عاطی تاجروں سے بھتہ وصول کرنا انکار پر قتل کروادیتا تھا۔

تفصیل کے مطابق گوجرانوالہ کے علاقہ علی پوچھٹہ کارہائشی عاطف عرف لاہور یا معمولی جرائم میں جیل گیا جس نے جیل میں ایک منظم گروہ تشکیل دیا اور باہر آکر چوری ڈکیتی کی وارداتیں کرنے لگے جس کے بعد عاطف عرف عاطی لاہور یا پولیس کے ڈر سے رو پوش ہوگیا بااثر سیاسی شخصیات کی پناہ لے کر بھتہ خور گردہ تشکیل دیا عاطف عرف عاطی اپنے گینگ میں آوارہ لڑکوں کو اونچے خواب دکھا کر پھنساتا اور ان سے چوری ڈکیتی قتل اقدام جیسی وارداتیں کرواکر خوف وہراس پھیلاتا جس کے بعد اس علاقہ کے تاجروں امیروں کو بھتہ کی پرچی یافون کرتا جو انکار کرتا اس کو قتل کردیا جاتا۔ متعدد ایس ایچ او اس بدنام گروہ کی گرفتاری میں ناکامی کے بعد معطل ہوچکے تھے، اس گینگ کی زوال پذیرائی تب شروع ہوئی جب انہوں نے علاقہ کے تاجر عمران سے 10 لاکھ بھتہ مانگا انکار پر دکان پر بیٹھے دن دیہاڑے عمران کو اندھا دھند فائرنگ کرکے قتل کردیا اور فرار ہوگئے جس کے بعد سی پی او گوجرانوالہ اشفاق احمد خان نے ایکشن لیتے ہوئے عمران عباس چدھڑ کی سربراہی میں ٹیم تشکیل دی۔

پسند کی شادی نہ ہونے پر نوجوان کی نکاح کے روز خود کشی

ایس ایچ او علی پور چٹھہ ملک عرفان کی کوششوں سے چند روز میں ہی پولیس نے دونوں قاتلوں کو گرفتار کرلیا، برآمدگی کے لئے جاتے ہوئے ساتھیوں کے ہمراہ فائرنگ سے ہلاک ہوگئے۔ چند ماہ بعد ملک عرفان نے عاطف عرفی عاطی کے بھائی اعظم کو سعودیہ فرار ہوتے ہوئے ائیرپورٹ سے گرفتار کرلیا وہ بھی اپنے انجام کو پہنچ چکا ہے۔ اس خطرناک تینگ کے خطرناک ملزم فاروق اور اسلم جو بیرون ملک فرار ہیں جبکہ مہران عرف چندو جو متعدد قتل اقدام قتل بھتہ وصولی میں ملوث ہے جیل میں بند ہے اس خطرناک ملزم نے پیشی پر آئے چکمہ دے کر پولیس کو راہ فرار اختایر کی مگر چند ماہ بعد ہی سیالکوٹ سے گرفتار ہوگیا۔ یہ بھی علاقہ میں دہشت کی علامت سمجھا جاتا ہے اس کے باقی ساتھی ماجد عرف ماجھو، شہزاد عرف شازی بٹ، وجاہت بٹ بھی جیل میں ہیں جبکہ لقمان عرف نومی رضا محبوب، ابوذر عرف کاکا بٹ اسلم عرف چندو عرفان شاہ، خالد عرف خالدی، اسامہ پولیس کے ہاتھوں جہنم واصل ہوچکے ہیں۔

یہ خطرناک گروہ دوران ڈکیتی عورتوں کی عزتوں سے کھیلنا ایک مشغلہ سمجھتے تھے۔ گوجرانوالہ پولیس نے سی پی او گوجرانوالہ کی سربراہی اور ڈی ایس پی سی آئی اے کی شب و روز محنت سے اس کی گینگ کو انجام تک پہنچایا جس پر گوجرانوالہ جرائم کا ایک سیاہ باب منطقی انجام تک پہنچا۔

مزید : گوجرانوالہ

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...