وہ شہر جس کی فضاءمیں اس وقت ایک دن گزارنا 44 سگریٹ پینے کے برابر ہے، انتہائی پریشان کن خبر آگئی

وہ شہر جس کی فضاءمیں اس وقت ایک دن گزارنا 44 سگریٹ پینے کے برابر ہے، انتہائی ...
وہ شہر جس کی فضاءمیں اس وقت ایک دن گزارنا 44 سگریٹ پینے کے برابر ہے، انتہائی پریشان کن خبر آگئی

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) سموگ کے مسئلے سے پاکستان بھی دوچار ہے لیکن بھارت میں یہ اس قدر شدید ہو چکی ہے کہ جان کر پاکستانی اپنے ہاں سموگ ہونے کے باوجود کلمہ شکر ادا کریں گے۔ سی این این کی رپورٹ کے مطابق بھارتی دارالحکومت نئی دہلی کی فضاﺅں میں آلودگی اقوام متحدہ کے مقرر کردہ معیار سے کئی سو گنا زیادہ ہو چکی ہے اور اس میں ایک دن سانس لینے کا مطلب یہ ہے کہ آپ نے ایک دن میں 44سگریٹ پی لیے ہوں۔

’زمین پر بڑھتا دھواں اور ماحولیاتی تبدیلیاں دراصل اس وجہ سے ہیں‘ انتہائی خوفناک دعویٰ سامنے آگیا، جان کر آپ بھی 20 نومبر سے پہلے تیاری کرلیں گے کہ۔۔۔

اقوام متحدہ کے ادارے ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن کے مطابق فضاءمیں آلودگی اگر 25پوائنٹس تک پہنچ جائے تو وہ انسانی صحت کے لیے نقصان دہ ہوتی ہے لیکن امریکی سفارت خانے نے گزشتہ روز اپنے ایئرکوالٹی انڈیکس کی رپورٹ میں بتایا کہ نئی دہلی گزشتہ چند دنوں کے دوران میں ایک وقت ایسا بھی آیاکہ آلودگی 1000پوائنٹس سے اوپر پہنچ گئی۔ اب بھی یہ سطح 700سے 900کے درمیان برقرار ہے۔

حکومت نے نئی دہلی کے تمام سرکاری و غیرسرکاری تعلیمی ادارے غیرمعینہ مدت کے لیے بند کر دیئے ہیں۔ اپولو ہسپتال کے نظام تنفس کی بیماریوں کے ماہر ڈاکٹر دیپک روشا کا کہنا ہے کہ ”فضاءمیں آلودگی کی سطح انتہائی خطرناک حد کو پہنچنے کے باعث ہسپتالوں میں مریضوں کی تعداد تیزی سے بڑھ رہی ہے۔ میں نے اتنی خوفناک صورتحال نئی دہلی میں آج تک نہیں دیکھی۔“ بھارتی دارالحکومت کی صورتحال اس قدر سنگین ہو چکی ہے کہ اس کے وزیراعلیٰ اروند کیجری وال نے بھی اپنے ٹوئٹر اکاﺅنٹ پر نئی دہلی کو ’گیس چیمبر‘ قرار دے دیاہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس