امریکا میں حروف تہجی کو جوڑکرلکھنا لازمی قرار،نیاقانون منظور

امریکا میں حروف تہجی کو جوڑکرلکھنا لازمی قرار،نیاقانون منظور
امریکا میں حروف تہجی کو جوڑکرلکھنا لازمی قرار،نیاقانون منظور

  

واشنگٹن(این این آئی)ریاست کے گورنر کے حکم کو مسترد کرتے ہوئے امریکہ کی ریاست ایلونائے نے ایک نئے قانون کی منظوری دی ہے جس کے تحت سکول کے بچوں کے لیے حروف تہجی کو جوڑ کر لکھنا لازمی قرار دی گیا ہے۔

اس نوجوان نے کس چیز کے ذریعے اتنی بھرپور باڈی بنالی؟ حقیقت جان کر آپ کانپ اُٹھیں گے

امریکی ٹی وی کے مطابق اگرچہ ریاست ایلونائے کے ارکانِ سینٹ نے دعویٰ کیا کہ جوڑ کر انگریزی لکھنا بچوں کے لیے ضروری ہے لیکن حقیقت یہ ہے کہ بالغ لوگوں کی اکثریت اب ہاتھ سے کم ہی لکھتی ہے۔امریکہ میں انڈیانا سمیت کئی ریاستیں ایسی ہیں جہاں حروف جوڑ کر لکھنے کو نصاب سے نکال دیا گیا ہے۔ اسی طرح فِن لینڈ میں ہینڈ رائٹنگ کو آہستہ آہستہ نصاب سے نکال دیا گیا ہے اور اطلاعات یہ ہیں کہ انڈیانا کے سکولوں میں میں بھی یہ روایت ختم ہو رہی ہے۔اس سلسے میں اکثر یہ توجیح پیش کی جاتی ہے کہ جو وقت بچوں کو لکھائی کی تربیت دینے میں صرف ہوتا ہے، وہی وقت انھیں ٹائپنگ اور کوڈنگ جیسی جدید مہارتیں سکھانے میں صرف کیا جا سکتا ہے۔واضح رہے کہ امریکی سکولوں میں حروف کو جوڑ کر انگریزی لکھنے یا کرسِو لکھائی کی اہلیت ہونا ضروری نہیں رہا اور کئی دیگر ممالک میں اسے نصاب سے نکال دیا گیا یا ایک اختیاری مضمون بنا دیا گیا ہے۔

مزید : بین الاقوامی