زراعت کی ترقی خواب ، اہم منصوبہ فائلوں میں دفن ، کسانوں میں بے چینی

زراعت کی ترقی خواب ، اہم منصوبہ فائلوں میں دفن ، کسانوں میں بے چینی

ملتان (سپیشل رپورٹر )وزارت زراعت پنجاب کی جانب سے صوبے بھر میں زراعت کی ترقی کیلئے تیار کردہ اہم ترین منصوبہ حکومت پنجاب نے التواء میں ڈال دیا رواں مالی سال کے دوران چھوٹے کسانوں کوجدید زرعی ٹیکنالوجی سے متعارف کروانے کے لئے دوارب روپے کی لاگت (بقیہ 49نمبرصفحہ7پر )

سے صوبے بھر کی ہر یونین کونسل کی سطح پر جدید زرعی مشینری چھوٹے کسانوں کوکرائے پر دینے کااعلان کیا جس پر وزارت زراعت پنجاب کے ماہرین اور ایگری اکانومسٹ پنجاب نے دن رات محنت کرکے منصوبہ تیار کیا ‘ منصوبہ مکمل ہونے کے بعد فنانس ڈیپارٹمنٹ نے دو ارب روپے کی رقم جاری کرنی تھی اس منصوبے کی فزبیلٹی اور پی سی ون پر لاکھوں روپے خرچ ہونے کے باوجودمذکورہ منصوبے کی رقم جاری نہیں کی گئی ہے ذرائع کے مطابق سابقہ دور حکومت میں مذکورہ منصوبے کے فنڈزختم کرکے لاہورمیں اورینج لائن پر مختص کردیئے گئے تھے حالانکہ مذکورہ منصوبے کاتمام پیپر ورک مکمل ہوچکا ہے فنڈز کی کمی کے باعث مذکورہ منصوبہ پایہ تکمیل تک نہیں پہنچ پایا جس کی وجہ سے چھوٹے کسانوں میں شدید پریشانی اور بے چینی پائی جاتی ہے جبکہ دوسری جانب وزارت زراعت پنجاب کے حکام بھی اس حوالے سے خاموشی اختیار کئے ہوئے ہیں۔

زراعت کی ترقی

مزید : ملتان صفحہ آخر