ٹیچنگ ہسپتال ڈیرہ ، وارڈ سرونٹ کا لیڈی ڈاکٹر پر تشدد، موبائل چھیننے کی کوشش

ٹیچنگ ہسپتال ڈیرہ ، وارڈ سرونٹ کا لیڈی ڈاکٹر پر تشدد، موبائل چھیننے کی کوشش

ڈیرہ غازیخان(سٹی رپورٹر )ٹیچنگ ہسپتال میں وارڈ سرونٹ کا لیڈی ڈاکٹرکا مبینہ طورپر موبائل چھیننے کی کوشش،تشد د کا نشانہ بھی بنایا،ینگ ڈاکٹر نے احتجاج کرتے ہوئے یمرجنسی، سرجیکل وارڈ میں کام بندکردیا، تفصیلات کے مطابق ٹیچنگ ہسپتال کے سرجیکل وارڈ میں آصف ندیم نے ہاؤس آفیسر لیڈی ڈاکٹر کو تھپڑ مارا اور مبینہ طور پر حراساں کرنے اور موبائل چھیننے کی کوشش کی واقعہ کی اطلاع پر ینگ ڈاکٹرز اکھٹے ہو گئے اور احتجاج کیا اور ٹراما سنٹر،ایمرجنسی (بقیہ نمبر20صفحہ12پر )

وارڈ،چیلڈرن وارڈ میں کام بند کردیا، اس موقع پر ڈپٹی ایم ایس ڈاکٹر خالد تحسین کا کہنا تھا وارڈ سرونٹ کو معطل کر کے واقعے کی انکوائری کے لیے تین رکنی کمیٹی تشکیل دے دی ہے کمیٹی 24 گھنٹوں میں اپنی رپورٹ پیش کرے گی اس موقع پر ینگ ڈاکٹرز ایسوسی ایشن کے جنرل سیکرٹری امین قیصرانی کا کہنا تھا وارڈ سرونٹ کے خلاف ہسپتال انتظامیہ کی جانب سے کوئی قانونی کاروائی نہ کی گئی تو وہ کام بند کر کے احتجاج کریں گیاور اس ماحول میں خواتین ڈاکٹرز کس طرح کام کر سکتی ہیں انہوں نے وزیر صحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشد سے واقعہ کا فوری نوٹس لینے کا مطالبہ کر تے ہو ئے ڈاکٹروں کو تحفظ فراہم کر نے کا مطالبہ کیا ہے ادھر ڈپٹی ایم ایس ڈاکٹر خالد تحسین کی طرف سے مذکورہ وارڈ سرونٹ کو تھانہ سول لائن پولیس کے حوالے کر نے اور اس کے خلاف کاروائی کی یقین دہانی کرائے جانے پر ڈاکٹروں نے احتجاج ختم کر کے دوبارہ کام شروع کر دیا ہے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر