بلوچستان میں سابق حکومت کی جاری سکیمیں ختم کرنے کا فیصلہ

بلوچستان میں سابق حکومت کی جاری سکیمیں ختم کرنے کا فیصلہ

کوئٹہ(آن لائن)بلوچستان حکومت نے سابق حکومت کی جاری سکیمیں ختم کرنے کا فیصلہ کر لیا۔ ان سکیموں کے باعث بلوچستان کے ترقیاتی عمل میں خلل پیدا ہوگیا۔ ذرائع کے مطابق حکومت بلوچستان نے 2013 سے2018 تک حکومت کی جاری سکیموں کو ختم کرنے کا فیصلہ کر لیا ،ان کیلئے200 ارب روپے رکھے گئے تھے حکومت نییہ سکیمیں ختم کرنے یا ان پر کٹوتی کر کے ان کے لئے 30 سے40 ارب روپے مختص کرنے کا فیصلہ کیا ذرائع کا کہنا ہے کہ اس وقت موجودہ حکومت کے پاس ترقیاتی بجٹ کے لئے فنڈز نہیں ہے جس کے باعث موجودہ حکومت نے یہ فیصلہ کر لیا کہ سابقہ حکومت میں جو جاری سکیموں کے لئے فنڈز رکھے گئے تھے ان کو اب ختم کرنا پڑے گا۔ وفاقی حکومت نے بھی بلوچستان کے 500 ارب روپے کے ترقیاتی فنڈز پر کٹ لگا دیا جس کے باعث بلوچستان حکومت شدید مالی بحران کا شکار ہوگئی۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ موجودہ حکومت رواں ترقیاتی بجٹ پر بھی کٹ لانے کے لئے کو ششیں کر رہی ہے تاکہ صوبے کو مالی بحران سے بچایا جا سکے ساتھ ہی اسٹیٹ بینک کا قرضہ بھی دن بدن بڑھتا جا رہا ہے ذرائع کا کہنا ہے کہ جو فنڈز ترقیاتی بجٹ کے لئے رکھے گئے ہیں وہ اسٹیٹ بینک کے قرضے کے ادائیگی کے لئے بھی دیئے جانے پر غور کیا جا رہا ہے۔

بلوچستان، سکیمیں ختم

مزید : صفحہ آخر