کراچی، ریسٹورنٹ سے ناقص کھانا کھانے سے 2بچے دم توڑ گئے

کراچی، ریسٹورنٹ سے ناقص کھانا کھانے سے 2بچے دم توڑ گئے

کراچی(سٹاف رپورٹر)کراچی کے علاقے کلفٹن میں واقع ریسٹورنٹ سے مضر صحت کھانا کھانے والے دونوں بچے دم توڑ ہوگئے جبکہ والدہ کی حالت تشویشناک ہے سندھ فوڈ اتھارٹی نے ریسٹورنٹ سیل کرکے کھانے کے نمونے ٹیسٹنگ کے لیے بھجوادئیے جبکہ پولیس نے ریسٹورنٹ سے چار افراد کو حراست میں لے لیا۔ایس ایس پی ساؤتھ پیر محمد شاہ کے مطابق جاں بحق ہونے والے بچوں نے اپنی والدہ کیساتھ ہفتے کی رات 11 بجے کلفٹن کے علاقے زمزمہ میں واقع نجی ریسٹورنٹ سے کھانا کھایا تھا اور متاثرہ خاندان کے بچوں نے ایک پلے لینڈ سے ٹافیاں، آئس کریم اور چپس کھائے تھے۔صبح 5 سے 6 بجے کے درمیان دو بچوں اور والدہ کی طبیعت خراب ہوئی اور انہیں الٹیاں ہوئیں لیکن تینوں کو دوپہر کے وقت ایک نجی اسپتال منتقل کیا گیا۔جب انہیں اسپتال لایا گیا تو بچوں کی حالت تشویشناک تھی اور دوران علاج دونوں بچے جانبر نہ ہوسکے اور دم توڑ گئے جبکہ بچوں کی والدہ کی طبعیت ناساز ہے پولیس کے مطابق جاں بحق بچوں کی کی شناخت ڈیڑھ سالہ احمد اور 5 سالہ محمد کے نام سے ہوئی ہے، پولیس نے فوڈ ڈیپارٹمنٹ کی ٹیمیں طلب کرکے تحقیقات شروع کردی ہیں ریسٹورنٹ اور پلے لینڈ کو سیل کردیا گیا ہے۔پولیس کے مطابق تحقیقات جاری ہیں ۔ دوسری جانب آئی جی سندھ کلیم امام نے مضر صحت کھانا کھانے سے بچوں کی اموات کا نوٹس لیکر ایس ایس پی ساؤتھ سے رپورٹ طلب کرلی ہے۔

مزید : صفحہ آخر