ایک ماہ میں ، پاکستان میں پی آئی اے سمیت 6ایئر لائنز کے طیاروں کو 74حادثات

ایک ماہ میں ، پاکستان میں پی آئی اے سمیت 6ایئر لائنز کے طیاروں کو 74حادثات

کراچی(این این آئی)سول ایو ی ایشن نے گذشتہ ایک ماہ کے واقعات کی رپورٹ جاری کردی، ملکی ائیرپورٹس پر آگ لگنے، جہازوں سے پرندہ ٹکرانے، ہنگامی لینڈنگ اور جہازوں پر لیزر لائٹس مارنے سمیت دیگر واقعات میں خوف ناک حد تک اضافہ ہوگیا۔سول ایوی ایشن اتھارٹی کی رپورٹ کے مطابق گذشتہ ایک ماہ میں پاکستانی ایئرپورٹس سے آپریٹ ہونے والی پی آئی اے، ائیر بلو سمیت 6 ایئرلائنز کو 74 حادثات و واقعات پیش آئے۔ رپورٹ کے مطابق سیرین ایئر کو5 بار حادثات سے دوچار ہونا پڑا، اتحاد امارات اور سعودی ائیر لائنز سمیت دیگر غیر ملکی ائیر لائن کو 30 مرتبہ حادثاتی صورت حال کا سامنا کرنا پڑا۔پی آئی اے کو سب سے زیادہ 30 مرتبہ اور ائربلیو کو 3 مرتبہ ہنگامی صورتحال کا سامنا کرنا پڑا۔ لاہور کراچی اور اسلام آباد ایئرپورٹ پر طیاروں سے پرندے ٹکرانے کے 16 واقعات پیش آئے جن میں سے غیر ملکی ائیرلائنز اور پی آئی اے کو 7،7جبکہ شاہین اور ائیر بلیو کو ایک ایک بار ایسے واقعے کا سامنا کرنا پڑا۔رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ پاکستانی ائرپورٹس سے آپریٹ ہونے والی تین پروازوں کو 15 مرتبہ میڈیکل ایمرجنسی کی صورت حال کا سامنا کرنا پڑا۔ غیر ملکی ائرلائن کو 7 مرتبہ اور پی آئی اے، شاہین اور ائیر بلیو کو 8 بار میڈیکل ایمرجنسی کا سامنا ہوا جبکہ زمین سے طیاروں پر لیزر لائٹ مارنے کے کل 7 واقعات رپورٹ ہوئے جن میں 5 واقعات غیر ملکی ایئر لائن جبکہ ایک واقعہ سیرین ایئر اور ایک واقعہ ایئربلیو کے ساتھ پیش آیا۔ اسی طرح طیاروں کے راستہ بھٹکنے کے 4 واقعات رپورٹ ہوئے جبکہ خراب موسم کے باعث طیاروں کا رخ موڑنے کے بھی 4واقعات رپورٹ ہوئے۔جہازوں کے انجن جلنے، فلائٹ کنٹرول پرابلم اور لینڈنگ گئیر کے تینوں حادثے پی آئی اے کو پیش آئے جبکہ رن وے بلاک اور ٹیکنیکل لینڈنگ کا واحد واقعہ بھی پی آئی اے کو ہی پیش آیا۔ رپورٹ کے مطابق دیگر نوعیت کے 9 مزید واقعات بھی سامنے آئے، دوران پرواز انجن خراب ہونے کے دو واقعات رونما ہوئے، پی آئی اے کے طیارے کو ایک مرتبہ شدید خراب موسمی صورت حال کا سامنا کرنا پڑا جبکہ ٹائر پھٹنے کا واحد واقعہ نجی ائرلائن کے ساتھ پیش آیا۔

مزید : صفحہ آخر