ڈی جی نیب کو کہہ دیا لوگوں کیساتھ احترام سے پیش آئیں ، چیف جسٹس

ڈی جی نیب کو کہہ دیا لوگوں کیساتھ احترام سے پیش آئیں ، چیف جسٹس

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک،نیوزایجنسیاں) چیف جسٹس ثاقب نثار نے کہا ہے کہ انہوں نے ڈی جی نیب کو کہا ہے لوگوں سے احترام کیساتھ پیش آئیں۔سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں گریٹر لاہور سوسائٹی کیس کی سماعت ہوئی۔ سابق نگراں وزیر قانون پنجاب ضیا ء حیدر رضوی عدالت میں پیش ہوئے۔ عدالت نے نیب کو 15 روز میں تحقیقات مکمل کرنے کا حکم دے دیا۔چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ لوگ سوسائٹیوں پر سانپ بن کر بیٹھے ہوئے تھے ان کے تبادلے کروائے گئے تو سیاسی لوگوں کی سفارشیں ڈھونڈنے لگ گئے۔ ضیاء حیدر نے کہا کہ گریٹر لاہور سوسائٹی میں مجھے نیب میں بھی بلایا گیا ہے نیب کا کیس بند کروا دیں۔چیف جسٹس نے کہا کہ نیب کا کیس بند نہیں کروا سکتا، ڈی جی نیب کو کہا ہے کہ وہ لوگوں کے ساتھ احترام سے پیش آئیں، ضیاء حیدر صاحب جب نیب میں آئیں تو ان سے احترام سے پیش آیا جائے۔سپریم کورٹ نے نعلین مبارک کی چوری کی تحقیقات کیلئے بنائی گئی جے آئی ٹی کے تمام نمائندوں کو طلب کرتے ہوئے ریمارکس دئیے ہیں کہ یہ عام کیس نہیں ہے کہ مقدمہ درج کروایا اور بیٹھ گئے۔ چیف جسٹس نے ریمارکس دئیے کہ نعلین مبارک کی چوری عقیدے کا کیس ہے،اتنی قیمتی چیز چوری ہو گی اور ہمیں پتہ ہی نہیں۔وکیل اوقاف نے کہا کہ ایف ائی آر درج کروائی جا چکی ہے۔چیف جسٹس نے کہا کہ یہ عام کیس نہیں ،چوری کو ہوئے 16سال گزر چکے ہیں ۔ چیف جسٹس نے تحقیقات کرنے والی جے آئی ٹی کے تمام ممبران کو طلب کرتے ہوئے سماعت ملتوی کر دی ۔علاوہ ازیں چیف جسٹس نے اوقاف کے تحت چندہ جمع ہونے کے کیس کی بھی سماعت کی ۔ چیف جسٹس نے ریمارکس دئیے کہ 85کروڑ روپے سالانہ اکھٹے ہوتے ہیں اور آپ تمام تنخواہوں کی مد میں اڑا دیتے ہیں ۔اس دوران چیف جسٹس نے کہا کہ میں قانونی لحاظ سے نہیں بصد احترام آپ سے پوچھ رہا ہوں، لیکن آپ کے رویے سے لگتا ہے مجھے قانونی طریقے سے ہی سننا ہوگا۔چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ چیف سیکرٹری پنجاب کہاں ہیں ،سیکرٹری اوقاف سے کام نہیں ہوتا تو عہدہ چھوڑ دیں ۔چیف جسٹس نے ریمارکس دئیے کہ کروڑوں روپے آپ تنخواہوں کی مد میں اڑا دیتے ہیں لیکن مساجد کے باتھ روم تک انتہاہی بری حالت میں ہیں۔چیف جسٹس نے مقدمے کی سماعت ایک ہفتے تک ملتوی کر دی ۔چیف جسٹس پاکستان نے سپریم کورٹ میں یونائیٹڈ کرسچین ہسپتال کیس کی سماعت کی ۔چیف جسٹس نے ریمارکس دئیے کہ یو سی ایچ مسیحی برادری کی طرف سے اچھا ہسپتال تھا لیکن اب یہ کھنڈر بن چکا ہے ۔چیف جسٹس نے چیف سیکرٹری کو حکم دیا کہ ایک ہفتے میں ہسپتال کی بحالی کا منصوبہ پیش کیا جائے ۔اپنی جائیداد فنڈ میں دینے والے شاہد شیخ کی بیوی اور تین بیٹے عدالت میں پیش ہو گئے جنہیں چیف جسٹس نے اپنے چیمبر میں طلب کر لیا۔ چیف جسٹس نے خاتون سے استفسار کیا آپ کے خاوند کے آپ کے ساتھ تعلقات ٹھیک ہیں۔ جس پر شاہد شیخ کی اہلیہ نے جواب دیا کہ جی تعلقات ٹھیک ہیں مگر ان کا ذہنی توازن درست نہیں ۔چیف جسٹس نے کہا کہ آپ تسلی رکھیں آپ کی جائیداد ڈیم فنڈ میں نہیں لیں گے۔جائیداد بچوں کا شرعی حق ہے جو ان سے نہیں چھینیں گئے۔ایڈیشنل ایڈووکیٹ جنرل نے بتایا کہ کل آٹھ جائیدادیں ہے جو شاہد شیخ نے ڈیم فنڈ میں دینے کا اعلان کیا تھا۔چیف جسٹس نے کہا کہ ان کو کسی اچھے ڈاکٹر سے چیک کرانے کا حکم کر دیتے ہیں۔سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں ایل ڈی اے کی جانب سے نجی سکول مالکان کو پلاٹوں کی الاٹمنٹ کا معاملہ کی درخواست پیش کی گئی، چیف جسٹس نے پنجاب حکومت ایل ڈی اے اور دیگر فریقین سے رپورٹ طلب کر لی۔چیف جسٹس کا اس موقعہ پر کہنا تھا کہ آپ کا مقدمہ پیر کو نجی سکولوں کی جانب سے اضافی فیسوں کی وصولی کے ساتھ سنا جائے گا۔

چیف جسٹس

مزید : صفحہ اول