شہبازشریف پر مزید گرفتاریاں ڈالی جاسکتی ہیں ،چودھری منظور

شہبازشریف پر مزید گرفتاریاں ڈالی جاسکتی ہیں ،چودھری منظور

لاہور ( آن لائن) پیپلز پارٹی کے رہنما چودھری منظور احمد نے کہاہے کہ 56کمپنیوں کے کیس میں شہبازشریف پر مزید گرفتاریاں ڈالی جاسکتی ہیں،نیب کو پارٹیاں توڑنے کیلئے بنایا گیاتھا۔اتوار کونجی ٹی وی سے گفتگومیں انکامزید کہنا تھا پبلک اکاونٹس کمیٹی کے چیئر مین شپ کے معاملے پر ہم ایک اصول پر کھڑے ہیں پبلک اکاونٹس کمیٹی کوئی نیب نہیں ہے جو نیب کی طرح کام کرے اس نے دیکھنا ہوتا ہے کہ کسی جگہ سائن نہیں ہوئے اور اگر سائن نہ ہوئے ہوں تو وہاں آڈٹ کا اعتراض ہوجائے گا ہم نوازشریف کو کہتے رہے کہ اس معاملے کو پارلیمنٹ میں لے آئیں لیکن وہ اس معاملے کو پارلیمنٹ میں لیکر نہیں آئے شہبازشریف پر 56کمپنیوں کا کیس ہے اور نیب ان پر گرفتاریاں ڈال سکتا ہے نیب اس دن ختم ہوجاتی جب وہ ایک خاص نقطہ نظر کے تحت ہاتھ ڈالتی ہے ، نیب توبنی ہی پارٹیاں توڑنے کیلئے ہے ہم یہ کہہ رہے ہیں کہ ہمیں نیب پر کوئی اعتراض نہیں لیکن دیکھنا یہ ہے کہ کیا یہ سب کچھ بلا امتیاز ہورہاہے؟ انہوں نے کہا کہ حکومت نے کہا تھا کہ ہم احتساب اپنے سے شروع کریں تو پھر علیم خان اور جہانگیر ترین کوپکڑیے اور باہر سے پیسے لیکر آنے ہیں تو علیمہ خان سے شروع کیجئے کوئی آپ کونہیں روکے گا، عذیر بلوچ کو دبئی سے لاکر طوطا بنا کر رکھا ہواہے اور جب اس کو پیش کیا جائے گا تو وہ بولنا شروع کردے گا یہ نہیں کیا جانا چاہئے اس کو عدالت میں پیش کردیا جانا چاہئے تھا۔

مزید : علاقائی