باجوڑڈسٹرک ہیڈ کوارٹر ہسپتال خار میں کروڑوں روپے کے قیمتی ادویات جلا دی گئیں

باجوڑڈسٹرک ہیڈ کوارٹر ہسپتال خار میں کروڑوں روپے کے قیمتی ادویات جلا دی گئیں

باجوڑ (نمائندہ پاکستانی) ضلع بھر میں لاکھوں مستحق مریضوں کو محروم کر کے ادویات ضائع کئے گئے تفصیلات کے مطابق ڈسٹرک ہیڈ کوارٹر ہسپتال خار میں کروڑوں روپے کے قیمتی ادویات جن میں قیمتی اینٹی بائیوٹیک ،انفیوژنز ،ہیپٹائٹس ABسمیت الرجی کے قیمتی ادویات زائد المیعاد ہونے کی وجہ سے بھاری مقدار میں محکمہ ہیلتھ کی غفلت کی وجہ سے جلا دیے گئے ضلع بھر کے ہزاروں مریض ہیڈ کوارٹر ہسپتال خار علاج معالجے کیلئے آتے ہیں جن کو ہسپتال سے باہر مختلف کمپنیوں کے ادویات نسخہ میں لکھ دئے جاتے ہیں لیکن غریب اور نادار مریضوں کو مسلسل نظر انداز کیا جا رہا ہے ذرائع کے مطابق ہسپتال کے مختلف وارڈز کے اندر اور باہر مختلف قسم کے گندگیوں کی وجہ سے آئے ہوئے مریضوں کو شدید مشکلات کا سامنا ہے جس سے پولیو کے خلاف جاری مہم کو بھی شدید نقصان پہنچنے کا خدشہ ہے کیونکہ پولیو بیماری پھیلنے کا بنیادی سبب انسانی فضلہ ہے ۔ ہسپتال انتظامیہ کی بے حسی کے سبب ہیڈ کوارٹر ہسپتال خار مختلف قسم کے مسائل کا شکار ہے ہسپتال ذرائع کے مطابق کسی قسم کی دوائی نہیں جلائی گئی بلکہ ایک سازش کے تحت ہسپتال کے ماحول کر کے ہمیں بدنام کیا جا رہا ہے عوامی حلقوں نے وزیر اعظم پاکستان ،ڈائیریکٹر ہیلتھ ،گورنر خیبر پختونخوا ،کور کمانڈر پشاور ،ڈی سی باجوڑ اور اعلی حکام سے مطالبہ کیا کہ ادویات جلانے کے بنیادی محرکات ، اسباب اور ہسپتال میں صفائی کی ابتر صورتحال کے بارے میں تحقیقاتی کمیٹی قائم کی جائے تاکہ حکومت کو سالانہ کرڑوں روپے کے نقصانات برداشت نہ اٹھانے پڑے ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر