اسرائیلی کمانڈوز نے خواتین کا روپ دھار کر اہم شخصیت کو قتل کردیا

اسرائیلی کمانڈوز نے خواتین کا روپ دھار کر اہم شخصیت کو قتل کردیا
اسرائیلی کمانڈوز نے خواتین کا روپ دھار کر اہم شخصیت کو قتل کردیا

  

یروشلم(مانیٹرنگ ڈیسک)اسرائیلی سکیورٹی فورسز کی عیاری کسی سے ڈھکی چھپی بات نہیں مگر گزشتہ روز غزہ کے فلسطینی علاقے میں اسرائیلی کمانڈوز نے مکاری و سفاکی کی نئی مثال قائم کر دی۔ ایسا روپ دھار کر غزہ میں داخل ہوئے کہ جس کی توقع کوئی بھی نہیں کر سکتا تھا، اور بڑا نقصان بھی کر گئے۔

فلسطینی میڈیا کے مطابق اسرائیلی سپیشل فورسز کے اہلکار خواتین کا روپ دھار کر غزہ کے علاقے میں داخل ہوئے اور حماس کے ایک اہم کمانڈر کو اغواءکرنے کی کوشش کی۔ اس کوشش کے نتیجے میں ایک شدید جھڑپ ہوئی جس میں دونوں اطراف کے لوگ ہلاک ہوئے۔ بعد میں پتا چلا کہ اسرائیلی کمانڈو حماس کے اہم کمانڈر نورالدین محمد کا قتل کر گئے ہیں۔

اسرائیلی فوج کی جانب سے بھی اس بات کی تصدیق کی گئی ہے کہ حماس کے ساتھ اسرائیلی فوجی اہلکاروں کا فائرنگ کا تبادلہ ہوا ہے۔ اسرائیلی فائرنگ سے حماس کے سات افراد جاں بحق ہوئے ہیں۔ دوسری جانب اسرائیلی فوج نے تسلیم کیا ہے کہ اس کا ایک اہلکار بھی مارا گیا ہے جبکہ ایک شدید زخمی ہے۔ میڈیا رپورٹس میں یہ بھی کہا جا رہا ہے کہ اسرائیل کا مارا گیا اہلکار ایک لیفینینٹ کرنل تھا۔

کچھ میڈیا رپورٹس میں اس واقعہ کو اس طرح بھی بیان کیا جا رہا ہے کہ اسرائیلی اہلکار حماس کے کمانڈر کو اغواءکرنے میں ناکام ہوئے جس کے بعد وہ واپس فرار ہورہے تھے کہ حماس کے جنگجوﺅں نے ان کا تعاقب شروع کردیا۔ اسی دوران اسرائیلی فوجیوں نے فضائی مدد منگوالی، جس کے بعد اسرائیلی طیاروں کے میزائل حملے میں حماس کا ایک کمانڈر اور چھے دیگر ارکان نشانہ بنے۔

مزید : بین الاقوامی