پیر سیف الرحمان درخواستی کی وفات بڑا المیہ ہے،حامد الحق حقانی

  پیر سیف الرحمان درخواستی کی وفات بڑا المیہ ہے،حامد الحق حقانی

  



نوشہرہ (بیورورپورٹ)جمعیت علمائے اسلام کے سربراہ اور دفاع پاکستان کونسل کے چیئرمین مولانا حامد الحق حقانی نے حضرت مولانا پیرسیف الرحمن درخواستی کی وفات پر گہرے رنج و غم کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ مولانا پیرسیف الرحمن درخواستی رحمہ اللہ علیہ ہماری جماعت جمعیت علمائے اسلام پاکستان کے مرکزی سرپرست اعلیٰ رہے، مرحوم نے ہمارے والد اور قائد جمعیت حضرت مولانا سمیع الحق شہیدؒ کے ساتھ ہر مشکل وقت میں بھرپورساتھ دیا،مولانا حامد الحق حقانی نے مرحوم کے خاندان اور جانشین حضرت مولانا پیر رحمت الرحمن درخواستی، حضرت مولانا حبیب الرحمن درخواستی، حضرت مولانا فداالرحمن درخواستی، حضرت مولانا مفتی اسعد درخواستی،حضرت مولانا عبدالصمد درخواستی،مولانا رحمت الرحمن،مولانا محمد جواد درخواستی، مولانا محمد خباب درخواستی،مولانا محمد احمد ثانی درخواستی وغیرہ سے دلی تعزیت کی اور دارالعلوم حقانیہ کے ایوان شریعت ہال میں طلباء سے مولانا پیرسیف الرحمن درخواستیؒ کی دینی و ملی خدمات پر انہیں خراج تحسین پیش کیا، انہوں نے کہاکہ مرحوم حضرت مولانا عبداللہ درخواستی رحمہ اللہ، شیخ الحدیث حضرت مولانا عبدالحق رحمہ اللہ اور شہید ناموس رسالت حضرت مولانا سمیع الحق شہید رحمہ اللہ کے مشن پر کاربند تھے،علما دیوبند کے صحیح معنوں میں ترجمان تھے،مولانا مرحوم اسلام اور پاکستان کیلئے کی خدمات کو تاریخ میں ہمیشہ یاد رکھا جائے گا، مولانامرحوم بیک وقت شیخ الحدیث،سیاستدان، صحافی اور مجاہد تھے۔مولانا مرحوم نے زندگی کا بیشتر حصہ دین کے نفاذ کے لئے گزارا انہوں نے ہمیشہ اسلاف کے نظریات کا پرچارکیا،اس سانحہ پر ہم سب مولانا سیف الرحمن درخواستی کے خاندان، شاگردوں،اور معتقدین سے دلی تعزیت کرتے ہیں دارالعلوم حقانیہ میں مرحوم کے ایصال ثواب کے لئے قرآن خوانی کا اہتمام کیا گیا،مولانا حقانی نے کہا کہ مولانا مرحوم کے جانشین حضرت مولانا پیر رحمت الرحمن درخواستی ان کے مشن کو آگے لے کر چلیں گے جس سے پاکستان اور اہل اسلام دنیاوی و اخروی ترقی سے مالا مال ہوں گے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر