نمونیا سے بچنے کے لئے احتیاطی تدابیر اپنائی جائیں،ڈاکٹر اشرف

نمونیا سے بچنے کے لئے احتیاطی تدابیر اپنائی جائیں،ڈاکٹر اشرف

  



لاہور(پ ر) 12نومبر کودنیا بھر میں نمونیہ سے آگاہی کا عالمی دن منایا جا رہا ہے اسی دن کی مناسبت سے شوکت خانم میموریل کینسر ہسپتال اور ریسرچ سنٹر، لاہور کے، کنسلٹنٹ انفیکشن ڈیزیز اینڈ جنرل میڈیسن ڈاکٹر اشرف علی خان نے میڈیا کے نمائندوں سے بات کرتے ہوئے کہا کہ نمونیہ پھیپھڑوں کے شدید انفیکشن کے باعث ہونے والی بیماری ہے جس کی پہچان اور بچاؤ کے لیے احتیاطی تدابیر کے حوالے سے آگاہی حاصل کرنا انتہائی ضروری ہے۔ اگرچہ یہ ایک قابلِ علاج بیماری ہے اور اس سے بچاؤ کے لیے ویکسین بھی دستیاب ہے پھر بھی دنیا بھر میں ہر سال لاکھوں افراداس بیماری کا شکار ہو جاتے ہیں۔ ایسے افراد جن کے جسم کا مدافعتی نظام کمزور ہوچکاہو، تمباکو نوشی کے عادی افراد، شوگراور استھما کے مریض، خاص طورپر2 سال سے کم عمر کے بچے اور 65سال سے زائد عمر کے افراد زیادہ آسانی سے نمونیہ کا شکار ہو سکتے ہیں۔

سگریٹ نوش افراد کے سلئیری فنکشن دھویں کی وجہ سے کمزور پڑ جاتا ہے اس لیے تمباکو نوش افراد کے نمونیہ کا شکار ہونے کے امکانا ت بھی بڑھ جاتے ہیں۔ نمونیہ کی علامات کے حوالے سے بتاتے ہوئے ڈاکٹر اشرف نے کہا کہ بخار کے ساتھ ساتھ چھاتی میں درد کا اٹھنا، کھانسی کے ساتھ بلغم آنا، اور سانس کا چڑھنانمونیہ کی علامات ہو سکتی ہیں۔اگرچہ نمونیہ کسی بھی موسم میں ہو سکتا ہے لیکن سردی کے موسم میں خاص طور پر بچے اور بوڑھے افراد اس کا شکار ہو سکتے ہیں اس لیے ان کے لیے احتیاطی تدابیر اختیار کرنا بھی زیادہ ضروری ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1