پاکستان کا شوگر کے حوالے سے پانچواں نمبر تشویشناک ہے،یاسمین راشد

  پاکستان کا شوگر کے حوالے سے پانچواں نمبر تشویشناک ہے،یاسمین راشد

  



لاہور(جنرل رپورٹر)صوبائی وزیرصحت پنجاب ڈاکٹریاسمین راشدنے مقامی ہوٹل میں خاندان اورذیابیطس کے موضوع پرمنعقدہ سیمینارمیں بطورمہمان خصوصی شرکت کی۔ اس موقع پروائس چانسلرکنگ ایڈورڈمیڈیکل یونیورسٹی پروفیسر ڈاکٹر خالد مسعود گوندل، پرنسپل امیرالدین میڈیکل کالج پروفیسر ڈاکٹر سردارالفرید و دیگر سینئرڈاکٹرز اورحاضرین کی بڑی تعدادنے شرکت کی۔وزیرصحت ڈاکٹر یاسمین راشد نے سیمینارکے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان کاشوگرکے مریضوں کے حوالے سے پانچویں نمبرپرآناانتہائی تشویش ناک ہے۔ پاکستان میں شوگرکی بیماری خوفناک حدتک بڑھتی جارہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب کے سرکاری ہسپتالوں میں شوگرکے مریضوں کی مناسب دیکھ بھال کی جارہی ہے۔

شوگرانسانی جسم کے ہرحصے کومتاثرکرتی ہے۔ شوگرکے مریضوں کی کونسلنگ اورشعورکی بیداری انتہائی اہم ہے۔ شوگر پرقابونہ پانے سے مریض کاکافی نقصان ہوتاہے۔ انتہائی اہم موضوع پرسیمینار منعقدکروانے پرانتظامیہ کومبارکباددیتی ہوں۔ یقین دلاتی ہوں کہ حکومت مریضوں کیلئے ہرقسم کی سہولت پیدا کررہی ہے۔ پروفیسرڈاکٹرسردارالفرید نے اپنے خطاب میں کہا کہ وزیرصحت کے سیمینار میں خصوصی شرکت پرمشکورہیں۔ سیمینارمیں مقررین نے وزیرصحت کو سرکاری ہسپتالوں میں مریضوں کیلئے آسانیاں پیداکرنے پرخراج تحسین پیش کیا

مزید : میٹروپولیٹن 1