ملتان شہری کی صفائی‘ 35کروڑ کی جدید مشینری خریدنے کا فیصلہ

ملتان شہری کی صفائی‘ 35کروڑ کی جدید مشینری خریدنے کا فیصلہ

  



ملتان(سپیشل رپورٹر)ایم ڈی ویسٹ مینجمنٹ کمپنی ناصر شہزاد ڈوگرنے کہا ہے کہ ملتان شہر کو صاف کرنا کمپنی کی اولین ترجیح ہے،35کروڑ روپے مالیت سے صفائی کیلئے جدید مشینری خریدی جائے گی،400منی کنٹینرز خریدنے، 300سینٹری ورکرز اور 25ڈرائیور تھرڈ پارٹی کے ذریعے بھرتی کئے جائیں  گے،سینٹری ورکرز کی کمی کو پورا کرنے کیلئے سٹرکوں پر مکینکل سوئیپرز کے ذریعے صفائی کی جائے گی، یونین کونسلوں  میں سینٹری ورکرز کی تعداد میں (بقیہ نمبر44صفحہ12پر)

اضافہ کیا جائے گا، موجودہ صورتحال میں 2800سینٹری ورکرز کی ضرورت ہے جبکہ میٹرو پولیٹن بننے کے بعد مزید سینٹری ورکرز کی ضرورت ہوگی۔ جنرل بس اسٹینڈ سے 10سینٹری ورکرز نکال لئے ہیں  جبکہ سبزی منڈی سے بھی سینٹری ورکرز نکالے جارہے ہیں، سرکاری اداروں کی صفائی کی ذمہ داری انہی اداروں کی ہوگی۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گذشتہ روز صحافیوں  سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے مزید کہا ہے کہ فیلڈ میں کرپشن کرنیوالوں  کو نہیں چھوڑا جائے گا، حالات سمجھنے دیں  پھر کاروائی خود دیکھیں، 1600سینٹری ورکرز فیلڈ میں  کام کر رہے ہیں موجودہ صورتحال میں 2800سینٹری ورکرز کی ضرورت ہے، میٹرو پولیٹن بننے کے بعد مزید سینٹری ورکرز کی ضرورت ہوگی۔ سبزی منڈی میں 25سینٹری ورکرز کام کر رہے ہیں  جن کو جلد نکال کر یونین کونسلوں  میں  تعینات کیا جائے گا، 85کنٹینرز، 250ہینڈ کارٹ 2مکینکل سوئیپر خراب ہیں  جن کی مرمت کیلئے ہنگامی بنیادوں پر کام کیا جارہا ہے،35کروڑ روپے مالیت سے جدید مشینری خریدی جارہی ہے جس کیلئے جلد ٹینڈر زجاری کئے جائیں گئے300سینٹری ورکرز اور 25ڈرائیور تھرڈ پارٹی کے ذریعے بھرتی کئے جائیں  گے،ورکشاپ کو اپ ڈیٹ کرنے کیلئے 10ہیڈ مکینک رکھے جارہے ہیں،روڈز پر سینٹری ورکرز کی تعداد کو کم کرنے کیلئے مکینکل سوئیپر کے ذریعے صفائی کی جارہی ہے، یونین کونسلوں  میں سینٹری ورکرز کی تعداد بڑھا دی گئی ہے، اگر سرکاری اداروں کی صفائی بھی ویسٹ مینجمنٹ کمپنی نے کرنی ہے تو ان کو ملنے والا فنڈز کہاں جائے گا، ملتان شہر صفائی کے لحاظ سے دیگر شہروں سے بہت بہتر ہے جس کو وزیراعلیٰ پنجاب نے بھی سراہا ہے، ویسٹ مینجمنٹ کمپنی نے ربیع الاول سے قبل 147فیصد ویسٹ اٹھا کر پنجاب بھر میں  پہلی پوزیشن حاصل کر لی ہے،ایک سوال پر انہوں  نے بتایا کہ سابق بورڈ آف ڈائریکٹرز کے اجلاس کے منٹس پر فنانس ڈیپارٹمنٹ کے نمائندے نے اعتراض لگایا تھا جس کے بعد ایجنڈا نمبر 23کا اطلاق نہیں  کیا گیا، دو روز قبل بورڈ آف ڈائریکٹرز کے اجلاس میں  مذکورہ ایجنڈے کو مسترد کردیا گیا اور منظوری کیلئے آئی اینڈ سی ڈیپارٹمنٹ کو مراسلہ بھیجوایا گیا ہے، انہوں نے بتایا کہ حبیبہ سیال لینڈ فل سائٹ پر ہو چکی ہے، موضع لابر پر سیمنٹ کمپنی سے 35ایکڑ زمین کا قبضہ لے لیا ہے جس پر لینڈ فل سائٹ بنائی جائے گی اس موقع پر پی ایس ایم ڈی محمد کاشف، پروکیورمنٹ منیجر علیم خان، منیجر آپریشن داودمکی، فنانس منیجر ساجد ریاض سمیت دیگر منیجر ز بھی موجود تھے۔

جدید مشینری

مزید : ملتان صفحہ آخر