اینٹی منی لانڈرنگ قانون استعمال کرنے کیخلاف دائردرخواست پر نیب سے شق وار جواب طلب

اینٹی منی لانڈرنگ قانون استعمال کرنے کیخلاف دائردرخواست پر نیب سے شق وار ...

  



لاہور(نامہ نگارخصوصی) لاہور ہائیکورٹ نے نیب کی جانب سے اینٹی منی لانڈرنگ قانون کے اختیارات استعمال کرنے کے خلاف دائردرخواست پر قومی احتساب بیورو سے شق وار جواب طلب لیا ہے۔جسٹس علی باقر نجفی اورجسٹس سرداراحمد نعیم پر مشتمل ڈویژن بنچ نے اس سلسلے میں دائرسلامت علی کی درخواست پر نیب اوردیگر مدعاعلیہان کو 25نومبر کے لئے نوٹس بھی جاری کردیئے ہیں۔سلامت علی نے خواجہ احمد طارق رحیم اور اظہر صدیق ایڈووکیٹس کی وساطت سے دائر اپنی درخواست میں الزام لگایا ہے کہ اینٹی منی لانڈرنگ کاالگ قانون ہے، اس قانون کے تحت دیگر اداروں کو حاصل اختیارات نیب استعمال کر رہا ہے،دو قانون مختلف ہیں اور ایک دوسرے سے مطابقت نہیں رکھتے، نیب کے ملزم کا 90روز کے لئے جسمانی ریمانڈ حاصل کیا جاسکتاہے جبکہ اینٹی منی لانڈرنگ ایکٹ کے تحت کسی ملزم کا14 دنوں سے زیادہ جسمانی ریمانڈ نہیں دیاجاسکتا۔، اینٹی منی لانڈرنگ ایکٹ کے تحت نیب کوکسی کے خلاف چھان بین کا کوئی اختیار نہیں۔

مزید : صفحہ آخر