حکومت،اپوزیشن میں اختلافات،انسانی حقوق کمیشن 6 ماہ کیلئے غیر فعال

       حکومت،اپوزیشن میں اختلافات،انسانی حقوق کمیشن 6 ماہ کیلئے غیر فعال

  



اسلام آباد(سٹاف رپورٹر)حکومت کی جانب سے ارکان کی سکریننگ مکمل نہ ہونے پر قومی کمیشن برائے انسانی حقوق (این سی ایچ آر) 6 ماہ کیلئے غیر فعال کردیا گیا۔رپورٹ کے مطابق چیئرمین این سی ایچ آر اور اس کے 7 میں سے 6 اراکین کے عہدے کی مدت 30 مئی کو اختتام پذیر ہوگئی تھی جس کے بعد ان کی متبادل تعیناتیاں اب تک نہ ہوسکیں۔خیال رہے کہ انسانی حقوق کمیشن پاکستان ملک میں ہونے والی انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں پر نظر رکھتا ہے اور اس کے پاس از خود نوٹس لینے کا بھی اختیار حاصل ہے۔اس حوالے سے وزارت انسانی حقوق کے ڈائریکٹر جنرل محمد ارشد کا کہنا تھا کہ انہیں امید ہے کہ ایک ہفتے میں امیدواروں کی اسکریننگ مکمل ہوجائے گی جس کے بعد ان کے نام وزیراعظم کے دفتر بھجوادیے جائیں گے۔دوسری جانب انسانی حقوق کمیشن کے عملے کو خدشہ ہے کہ وزیراعظم عمران خان اور قومی اسمبلی کے قائد حزب اختلاف شہباز شریف کے اختلافات کے باعث اب کمیشن شاید فعال نہ ہوسکے۔

انسانی حقوق کمیشن 

مزید : صفحہ اول