`ٹماٹر سمیت سبزیوں اور پھلوں کی قیمتوں میں اضافے کی وجہ سامنے آگئی

`ٹماٹر سمیت سبزیوں اور پھلوں کی قیمتوں میں اضافے کی وجہ سامنے آگئی
`ٹماٹر سمیت سبزیوں اور پھلوں کی قیمتوں میں اضافے کی وجہ سامنے آگئی

  



اسلام آباد (ویب ڈیسک)آلو، پیاز ، ٹماٹر اور دور دراز علاقوں سے آنے والے فروٹ کی قیمتوں میں اضافہ کی وجہ کنٹینرز کی کمی بھی بیان کی جا رہی ہے آزادی مارچ کی وجہ سےدس ہزار سے زائد کنٹینرز پولیس نے قبضہ میں لے رکھے ہیں، چھ ہزار کنٹینرز تو صرف اسلام آباد میں ہی رکاوٹوں کے طور پر استعمال کئے گئے ہیں۔

یاد رہے کہ کراچی میں ٹماٹر کی قیمت ایک بار پھر بڑھ گئی، 25 روپے اضافے کے بعد ٹماٹر 300 روپے کلو ہوگیا ہے۔پرائس کنٹرول کمیٹیاں سرکاری نرخ کا اطلاق کرانے میں بری طرح ناکام ہیں اور سبزی منڈی سمیت شہر بھر میں کہیں بھی سبزیوں کی سرکاری قیمتوں پر عملدرآمد نہیں ہورہا۔کراچی میں ٹماٹر کی قیمت ٹرپل سنچری کر چکی ہے جو کہ شہر کی تاریخ میں پہلی مرتبہ ہوا ہے ، شہری اس بڑھتے ہوئے اضافے سے بے حد پریشان دکھائی دے رہے ہیں۔

ایسوسی ایشن کے مطابق موسم سرد ہے اور بارشوں نے فصل خراب کردی تھی جو دوبارہ لگائی گئی ہے۔ کراچی میں ایران کا ٹماٹر آنا بند ہوگیا ہے، بلوچستان سے بھی لال ٹماٹر کی سپلائی کم ہوگئی ہے جبکہ سندھ میں ٹماٹر کی فصل تیار ہورہی ہے، 15 روز میں صورتحال واضح ہوگی۔شہر کے ایک بازار سے 380 روپے فی کلوٹماٹر کی آواز بھی سنائی دی۔ ذرائع کے مطابق کراچی میں صرف 2 ٹماٹروں کی قیمت 40 روپے تک پہنچ چکی ہے۔

ادھر وزیراعظم عمران خان کے مشیر خزانہ نے ٹماٹر 17 روپے کلو قرار دے دیئے۔مشیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ مارکیٹ میں ٹماٹر کی موجودہ قیمت سے لاعلم نظر آتے ہیں، ایک صحافی نے ٹماٹر کی فی کلو قیمت کا معلوم کیا تو انہوں نے 17 روپے کلو بتائی۔عبدالحفیظ شیخ سے سوال پوچھا گیا کہ کون سی منڈی میں ٹماٹر 17 روپے کلو فروخت ہورہے ہیں جس پر انہوں نے جواب دیا کہ دکانداروں نے ٹماٹر پرانی قیمت میں ذخیرہ کرکے رکھے ہوئے ہیں اور اب وہ مہنگا فروخت کررہے ہیں۔

واضح رہے کہ کراچی میں ٹماٹر کی قیمت ا?ج مزید اضافہ ہوا ہے، 25 روپے اضافے کے بعد ٹماٹر 300 روپے کلو ہوگیا ہے۔پرائس کنٹرول کمیٹیاں سرکاری نرخ کا اطلاق کرانے میں بری طرح ناکام ہیں اور سبزی منڈی سمیت شہر بھر میں کہیں بھی سبزیوں کی سرکاری قیمتوں پر عملدرآمد نہیں ہورہا۔کراچی میں ٹماٹر کی قیمت ٹرپل سنچری کر چکی ہے جو کہ شہر کی تاریخ میں پہلی مرتبہ ہوا ہے، شہری اس بڑھتے ہوئے اضافے سے بے حد پریشان دکھائی دے رہے ہیں۔

ایسوسی ایشن کے مطابق موسم سرد ہے اور بارشوں نے فصل خراب کردی تھی جو دوبارہ لگائی گئی ہے۔ کراچی میں ایران کا ٹماٹر آنا بند ہوگیا ہے، بلوچستان سے بھی لال ٹماٹر کی سپلائی کم ہوگئی ہے جبکہ سندھ میں ٹماٹر کی فصل تیار ہورہی ہے، 15 روز میں صورتحال واضح ہوگی۔شہر کے ایک بازار سے 380 روپے فی کلوٹماٹر کی آواز بھی سنائی دی۔ذرائع کے مطابق کراچی میں صرف 2 ٹماٹروں کی قیمت 40 روپے تک پہنچ چکی ہے۔

مزید : علاقائی /اسلام آباد