’ مولانا فضل الرحمان کے دھرنے کی وجہ سے حکومت دباؤ میں آگئی ہے اور ۔۔۔ ‘ خرم دستگیر نے وضاحت کردی

’ مولانا فضل الرحمان کے دھرنے کی وجہ سے حکومت دباؤ میں آگئی ہے اور ۔۔۔ ‘ خرم ...
’ مولانا فضل الرحمان کے دھرنے کی وجہ سے حکومت دباؤ میں آگئی ہے اور ۔۔۔ ‘ خرم دستگیر نے وضاحت کردی

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) مسلم لیگ ن کے رہنما خرم دستگیر نے کہاہے کہ حکومت پر مولانا فضل الرحمان کے آزاد ی مارچ سے دباﺅ آیا ، پانچ ماہ تک سینیٹ کا اجلاس نہیں ہوا، قومی اسمبلی کا اجلاس تین ماہ تک نہیں ہوا ۔

جیونیوز کے پروگرام ”کیپٹل ٹاک“میں گفتگو کرتے ہوئے خرم دستگیر نے کہا کہ حکومت پر مولانا فضل الرحمان کے آزاد ی مارچ سے دباﺅ آیا ، پانچ ماہ تک سینیٹ کا اجلاس نہیں ہوا، قومی اسمبلی کا اجلاس تین ماہ تک نہیں ہوا ، اگر ہوا بھی تو یہ تاریخ کا سیاہ ترین دن تھاجب ڈپٹی سپیکر نے اپنی سیٹ پر بیٹھتے ہوئے یہ کہہ کر آڈیننس پاس کردیئے کہ جی منظور ہے اور کہاگیا کہ منظور ہے ۔

خرم دستگیر کاکہنا تھا کہ ان بلز کو سینیٹ میں جانا چاہئے تھا ۔انہوں نے کہا کہ ہمیں  حکومت کی جانب سے پاس کرائے گئے آرڈیننسز پر اعتراض یہ ہے کہ ایک وقت میں اکٹھے آرڈیننسز آئے لیکن اپوزیشن کو بات کرنے کا موقع نہیں دیا گیا ۔انہوں نے کہا کہ اکثریت کی حیثیت کے غلط استعمال نے ایوان کی ساکھ کومجروح کیا اورحکومت کی اپنی ساکھ بھی متاثر ہوئی ۔

مزید : قومی