مشروط حکومتی فیصلہ ، نواز شریف نے علاج کیلئے بیرون ملک جانے سے انکارکردیا

مشروط حکومتی فیصلہ ، نواز شریف نے علاج کیلئے بیرون ملک جانے سے انکارکردیا
مشروط حکومتی فیصلہ ، نواز شریف نے علاج کیلئے بیرون ملک جانے سے انکارکردیا

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) نواز شریف نے حکومت کی جانب سے مشروط فیصلے کے بعدبیرون ملک جانے سے انکار کردیا ہے جبکہ شریف فیملی کی جانب سے ان کو باہر بھجوانے کے لئے اصرار کیا جارہاہے ۔

نجی نیوز چینل نے ذرائع کے حوالے سے بتایا ہے کہ شہبازشریف نے جاتی امرا میں نواز شریف سے ایک گھنٹہ ملاقات کی ۔ نواز شریف نے مشروط حکومتی فیصلے کے بعد علاج کے لئے باہر جانے سے انکار کردیا ہے جبکہ شریف خاندان کا اصرار ہے کہ نوازشریف علاج کے لئے ملک سے باہر جائیں۔ ابھی تک نواز شریف اورشہبازشریف کے بیرون ملک جانے کی تصدیق نہیں ہوسکی اور نہ ہی ائر ایمبولینس کو  کنفرم کیا گیاہے ۔

دوسری جانب مسلم لیگ ن کی ترجمان مریم اورنگزیب نے کہاہے کہ عدالت میں ضمانت کے طور پربانڈز جمع ہیں ، یہ نہیں ہوسکتا کہ حکومت عدالت کے اوپر عدالت لگاکر بیٹھ جائے ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نے ایک گری ہوئی حرکت کی ہے، اس شخص سے سکیورٹی بانڈز مانگے جارہے ہیں جو اپنی بیماربیوی کو چھوڑ کر وطن آیا ۔حکومت کی شرائط غیر قانونی ہیں۔حکومت نواز شریف کی صحت پر سیاست کررہی ہے۔

مزید : اہم خبریں /قومی