پرویز مشرف کی رہائی سے انارکی میں اضافہ ہو گا،پروفیسر ساجد میر

پرویز مشرف کی رہائی سے انارکی میں اضافہ ہو گا،پروفیسر ساجد میر

ق لاہور ( پ ر) مرکزی جمعیت اہل حدیث پاکستان کے سربراہ سینیٹر پروفیسر ساجد میر نے کہا ہے پرویز مشرف کی رہائی سے انارکی میں اضافہ ہو گابلوچ عوام اور متاثرین لال مسجد کے حلقوں میں موجود ردعمل میں شدت آ سکتی ہے مشرف نے جتنے جرائم کیے اس سے آدھے بھی کسی سیاستدان نے کیے ہوتے تو اسے اب تک پھانسی دی جاچکی ہوتی مگر لگتا ہے کہ دفاعی ادارے اس بات کا فیصلہ کر چکے ہیں کہ وہ اپنے سابقہ چیف کو ہر قیمت پر بچائیں گے جمعہ کے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اکبر بگٹی اور لال مسجد کے سانحات میں ملوث ہونے کے علاوہ مشرف نے اپنی کتاب میں خود اعتراف کیا ہے کہ اس نے ڈالر لے کر درجنوں پاکستانیوں کو امریکہ کے ہاتھوں فروخت کیاسینکڑوں افراد اسی کے دور میں لاپتہ ہوئے، اس نے آئین توڑا،آئینی اداروں کی تضحیک کی اس لحاظ سے پرویز مشرف قومی مجرم ہے اگر اسے کسی ڈیل کے نتیجہ میں رہا کیا گیا تو بہت بڑا قومی المیہ ہو گامتاثرین لال مسجد کو انصاف نہ ملا اس سے ملک میں جاری دہشت گردی اور انارکی کی فضامیں اضافہ کا خطرہ بڑھ جائے گا ہمارے قومی اداروں کو حالات کی سنگینی کا ادراک ہو نا چاہیے۔

مزید : میٹروپولیٹن 4