مصر نے مرسی کے دور حکومت میں قطر سے لیے گئے قرضہ میں سے 500ملین ڈالر ادا کردیئے

مصر نے مرسی کے دور حکومت میں قطر سے لیے گئے قرضہ میں سے 500ملین ڈالر ادا کردیئے

واشنگٹن(اے این این) مصری حکومت نے 2011ءکے انقلاب کے بعد محمد مرسی کے دور حکومت میں قطر سے لیے گئے 500ملین ڈالر کی رقم ادا کردی ۔مصرکے مرکزی بینک کے گورنر نے کہاکہ خلیجی ممالک سے لیے گئے قرضے بھی مرکزی بینک میں جمع رقم کو بھی جلد واپس کریں گے ۔قطر کی حکومت نے حسنی مبارک حکومت کے خاتمے کا سبب بننے والے انقلاب کے بعد محمد مر سی کی دور حکومت میں گرتی معیشت کو سہارا دینے کیلئے امداد دی تھی ۔بادشاہت کے خاتمے کے بعد محمد مرسی کی تنظیم اخوان المسلمون کو تقویت دینے کیلئے 7.5بلین ڈالر کا قرضہ دیا تھا۔مصر کے مرکزی بینک کے گورنر ہشام رمیز نے آئی ایم ایف اور عالمی بینک کے نمائندوں سے اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ مصر نے یکم اکتوبر کو قطر کو 500ملین ڈالر کی رقم واپس کردی اوربقیہ 2.5بلین ڈالر کی رقم نومبر کے آغاز میں ہی واپس کردیں گے کیونکہ قطر نے تجدید کے حوالے سے کچھ نہیں کہا۔مصر اور قطر کے تعلقات محمد مرسی حکومت کے خاتمے کے بعدآرمی چیف عبدالفتح السیسی کے اقتدار میں آنے کے بعد خراب ہوگئے ۔سیسی نے اقتدار میں آنے کے بعد اخوان المسلمون کے خلاف بڑے پیمانے پر کریک ڈاﺅن شروع کردیا جس میں سینکڑوں افراد کو ہلاک اور ہزاروں کی تعداد میں کارکنان کو جیل بھیج دیاگیا تھا۔

مزید : کامرس