پارک اینڈ رائیڈ پلازہ کی سات دکانوں کا نیلام عام کل ہو گا

پارک اینڈ رائیڈ پلازہ کی سات دکانوں کا نیلام عام کل ہو گا

لاہور(خبرنگار) جو ہر ٹاﺅن‘جوبلی ٹاﺅن‘ سبزہ زار اور تاج پور ہ او ر فروٹ مارکیٹ علامہ اقبال ٹاﺅن مےں بہترین لوکیشن پر واقع 25پلاٹوں کا نیلام عام اور لبرٹی پارک اینڈ رائیڈ پلازہ کی سات دکانوں کا نیلام عام کل ( پیر 13 اکتوبر 2014ءکو) دن 10:00بجے ایل ڈی اے کمیونٹی سنٹر نیو مسلم ٹاﺅن میں ہو گا -حال ہی میں پلازہ کی دسویں منزل پرتعمیر جانے وا لا شہر کا بلند ترین روف ٹاپ ریسٹورنٹ ایک کروڑ57لاکھ68ہزار روپے سالانہ کرایہ پر دے دیا گیاہے جو یہاں کاروباری سرگرمیوں کے یقینی فروغ کی ضمانت ہے پارک اینڈ رائیڈپلازہ کی 26دکانیں پہلے ہی نیلام ہو چکی ہیں‘ ملکی تاریخ میں یہ پہلی دکانیں ہیںجن کی نیلامی کی کارروائی ٹیلی ویژن پر براہ راست نشر کی گئی-ایل ڈی اے کا کہنا ہے کہ پلازہ میں سرمایہ کاری ہر لحاظ سے محفوظ اور منافع بخش ہے ‘ شہری بلا جھجک نیلامی میں حصہ لے کر لبرٹی چوک میں کاروبار شروع کرنے کے نادر موقع سے فائدہ اٹھائیں- لبرٹی چوک کی آئیڈیل لوکیشن پر برلب سڑک مین بلیوارڈ گلبرگ پریہ 11 منزلہ پلازہ تین کنال 17مرلے اراضی پر 67کروڑ70لاکھ روپے کی لاگت سے تعمیر کیا گیا ہے‘ اس کی چھت پر لاہور کا بلند ترین ریسٹورنٹ اور پہلی منزل پر بھی ایک جدید ترین ریسٹورنٹ بنائے گئے ہیں جن کی وجہ سے ا س پلازہ کو جلد ہی مقبول عام پبلک سپاٹ کی حیثیت حاصل ہو جائے گی جہاں ہر روز پانچ سے آٹھ ہزار افراد کی آمد متوقع ہے- پلازہ میںداخلے کے راستے عمارت کے چاروں طرف سے رکھے گئے ہےں - عمارت میں سٹینڈ بائی جنریٹر کے علاوہ سیکورٹی کا بھی خصوصی انتظام کیا گیا ہے اور اس مقصد کے لئے کار سکینرز‘ کلوز سرکٹ کیمرے‘ فائر الارم سسٹم اورپبلک ایڈریس سسٹم نصب کئے گئے ہیں ۔ پلازہ کی آٹھ منزلیں گاڑیوں کی پارکنگ کے لئے استعمال ہو رہی ہیں جہاں اوسطا 12گھنٹے پارکنگ کے لئے 308گاڑیاںکھڑی کی جا سکتی ہیں- پارکنگ پلازہ کی بالائی منزلوں پر گاڑیاں پارک کرنے نیچے آنے اور گاڑیاں واپس لانے کے لئے اوپر جانے کے لئے دو کیپسول لفٹیں نصب کی گئی ہیں ‘ کسی بھی ہنگامی صورتحال میں عمارت سے نکلنے کے لئے الگ راستہ تعمیر کیا گیا ہے۔پہلی نیلامی میںرکھی گئی دکانوں کی ریزور قیمت18کروڑ53لاکھ روپے مقرر تھی جبکہ یہ 21کروڑ45لاکھ روپے میں نیلام ہوئیں-دوسری نیلامی میں رکھی گئی دکانوں کی ریزورقیمت چارکروڑ38لاکھ روپے مقرر تھی جبکہ یہ چارکروڑ70لاکھ25ہزار روپے میں نیلام ہوئیںجو موجود ملکی حالات میں ایک حوصلہ افزا امر ہونے کے ساتھ ساتھ حکومت پنجاب کی پالیسیوں پر کاروباری طبقے کے اعتماد کی علامت ہیں -

مزید : میٹروپولیٹن 1